پاکستان اور روس کے درمیان دفاعی تعاون بڑھانے پر اتفاق

خبر کا کوڈ: 1138365 خدمت: دنیا
روسیه و پاکستان

پاکستانی اور روسی فضائی فورسز کے درمیان ایوی ایشن ٹیکنالوجی اور دفاعی شعبے میں تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

تسنیم نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، یہ اتفاق پاکستان فضائیہ کے سربراہ ائیر چیف مارشل سہیل امان اور انکے روسی ہم منصب کرنل جنرل وکٹر بوڈریو کے درمیان ماسکو میں ہونے والی ملاقات میں ہوا۔

نوائے وقت کے مطابق، پاکستان ایئر فورس کے اعلامیے میں آیا ہے کہ روس نے دوطرفہ آپریشنل مشقوں میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے تاکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھاسکیں۔

ایئر چیف مارشل سہیل امان نے روسی ایئر بیس اور ایوی ایشن انڈسٹری کا بھی دورہ کیا اور وہاں جدید لڑاکا طیاروں اور دیگر اہم فوجی ہتھیاروں کا جائزہ لیا۔

دورے کے دوران پاک فضائیہ کے چیف کو روسی ایئر فورس کے کردار اور کاموں کے بارے میں بھی بریفنگ دی گئی، ایئر چیف نے روسی ایئر فورس کی پیشہ ورانہ اور آپریشنل صلاحیتوں کو سراہا اور کہا کہ پاکستان روس فضائی مشقیں وقت کی ضرورت ہیں۔ دونوں ممالک تعاون سے اپنی آپریشنل صلاحیتیں بڑھا سکتے ہیں۔ اسکے علاوہ ایوی ایشن انڈسٹری میں ملکر بھی کام کر سکتے ہیں۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے ایئر فورس کے درمیان مشترکہ تربیتی اور آپریشنل مشقوں کی اہمیت پر زور دیا تاکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھاسکیں۔ ایئر چیف مارشل سہیل امان نے روسی فیڈریشن ایرواسپیس فور کے کمانڈر انچیف اور کرنل جنرل وکٹر بونڈریو سے بھی ملاقات کی اور پیشہ ورانہ اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادل خیال کیا۔

انہوں نے روسی کرنل جنرل کو پاکستان کی مسلح افواج کی خدمات خاص طور پر ضرب عضب آپریشن میں فوج کے کردار کے بارے میں بتایا۔

روسی فضائیہ کے سربراہ وکٹر بونڈریو نے پاک فضائیہ کی پیشہ ورانہ مہارت کے اعلیٰ معیار کی تعریف کی اور ایک دوسرے کے تجربات سے سیکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

یاد رہے کہ امریکہ اور ہندوستان کے درمیان متعدد معاہدوں اور مختلف شعبوں میں تعاون میں اضافے پر پاکستان کوشش کر رہا ہے کہ افغانستان میں اپنے پرانے حریف روس کے ساتھ تعلقات بحال کرے جو کئی عشروں سے تاخیر کا شکار تھے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری