افغانستان میں پاکستانی مزدوروں کی حالت دگرگوں/ تشدد کے بعد 250 افراد بے دخل

خبر کا کوڈ: 1170245 خدمت: پاکستان
نقشه افغانستان و پاکستان

افغانستان میں قانونی طور پر کام کرنے والے پاکستانی مزدوروں کو گرفتار کرکے تشدد کے بعد ملک سے نکالا جا رہا ہے۔

تسنیم نیوز ایجنسی کے مطابق، چند روز قبل باب دوستی پر ہونے والی پاک افغان عوام کے درمیان کشیدگی کے بعد افغانستان میں قانونی طور پر کام کرنے والے پاکستانی مزدوروں کو گرفتار کرکے تشدد کے بعد بے دخل کیا جا رہا ہے۔

روزنامہ دی نیوز نے خبر دی ہے کہ پاک افغان سرحد پر باب دوستی کے بند ہو جانے کے بعد افغانستان میں قانونی طور پر کام کرنے والے پاکستانی مزدوروں کو گرفتار کرکے تشدد کے بعد نکالا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ پاک افغان سرحد کے دس روز سے بند ہونے کے باعث نیٹو سپلائی سمیت تمام تجارتی کارروائیاں بھی مکمل طور پر معطل ہیں۔

رحیم یار خان سے تعلق رکھنے والے ایک پاکستانی مزدور کا کہنا تھا کہ قانونی دستاویزات ہونے کے باوجود ان کو گرفتار کیا گیا۔

افغان سیکورٹی فورسز کے اس سلوک کی وجہ سے افغانستان میں پاکستانی محنت کشوں کو سنگین مشکلات کا سامنا ہے۔ ان مزدوروں نے پاکستانی حکام سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ وہ انہیں اس بےانصافی سے بچانے کے لیے افغان حکام سے فوری طور پر رابطہ کریں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری