ایران، پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں شامل ہونے کا خواہاں

خبر کا کوڈ: 1183284 خدمت: ایران
پاک ایران

پاکستان میں تعینات ایرانی سفیر مہدی ہنر دوست کا کہنا ہے کہ ایران، پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں کردار ادا کرنے کا خواہش مند ہے۔

تسنیم نیوز ایجنسی کے مطابق، ایران، پاکستان میں جاری پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں شامل ہونے کا خواہش مند ہے۔

اسلام آباد میں فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کے دفتر کے دورے کے موقع پر ایرانی سفیر مہدی ہنردوست کا کہنا تھا کہ ان کا ملک توانائی کی فراہمی اور سڑکوں، ریلوے اور ڈیم کی تعمیر کے ذریعے پاکستانی معیشت کی ترقی میں مدد کرنے کی اہلیت رکھتا ہے۔

اس موقع پر مہدی ہنر دوست کا کہنا تھا کہ ایرانی گیس پاکستان کے لئے توانائی کا سب سے سستا، تیز رفتار اور سب سے زیادہ قابل اعتماد ذریعہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس منصوبے کو جلد از جلد شروع ہونا چاہئے۔

مہدی ہنر دوست کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیکسٹائل، چاول، طبی آلات، کھیلوں کے سامان اور زرعی مصنوعات کی ایران میں بہت مانگ ہے۔

تاہم ایرانی سفیر نے تسلیم کیا کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارت اور کاروبار، بینکاری کے چینلز کی کمی کی وجہ سے محدود ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بینکاری کے مسائل کو حل کرنے سے دوطرفہ تجارت میں تیزی آئے گی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایف پی سی سی آئی کے صدر عبدالرؤف عالم نے کہا کہ پاکستان اور ایران پہلے ہی 2021 تک سالانہ تجارتی حجم کو 5 ارب ڈالر تک بڑھانے کا فیصلہ کرچکے ہیں، جس کے لئے کوششوں کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ گوادر اور چاہ بہار بندرگاہیں ایک دوسرے کی حریف نہیں بلکہ یہ خطے میں بحری تجارت کا مرکز بننے کے لئے ایک دوسرے کو مدد دیں گی۔

ایرانی سفیر نے دونوں ممالک کے درمیان تجارت کو بڑھانے کی اہمیت پر زور دیا۔

وہ اسلام آباد میں فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کے دفتر کے دورے پر تھے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری