تیل مہنگا، خون سستا؛

امریکی صدر نے سعودی عرب کے خلاف نائن الیون بل کو مسترد کردیا

خبر کا کوڈ: 1194844 خدمت: دنیا
امریکہ عرب

بل کے پاس ہونے پر نائن الیون سانحے میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین سعودی حکومت کے خلاف مقدمہ کرسکتے تھے تاہم صدر اوبامہ نے اپنے اختیارات استعمال کرتے ہوئے بل کو ویٹو کردیا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، امریکی صدر نے سعودی عرب کے خلاف سینٹ میں منظور ہونے والے نائن الیون بل کو مسترد کردیا ہے۔

امریکی سینیٹ سے منظوری کے بعد حتمی منظوری کے لئے نائن الیون بل پر امریکی صدر کے دستخط ہونا باقی تھے تاہم اوباما نے اپنے اختیارات استعمال کرتے ہوئے بل کو ویٹو کردیا ہے۔

نائن الیون حملے کے حوالے سے سعودی عرب کے خلاف منظور ہونے والے بل کو مسترد کرتے ہوئے براک اوباما کا کہنا تھا کہ یہ بل امریکی مفادات کے خلاف ہے۔

امریکی صدر کے اس موقف کا پس منظر بالکل واضح ہے۔

سعودی عرب نے امریکہ کو پہلے ہی خبردار کردیا تھا کہ اگر مذکورہ بل کو قانون کی شکل دی گئی تو وہ امریکہ میں موجود اپنی 750 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری ختم کر دے گا۔

واضح رہے کہ نائن الیون بل پر سعودی حکومت اور امریکہ کے درمیان تعلقات سرد مہری کا شکار تھے۔

نائن الیون کے 15 سال مکمل ہونے پر امریکی ایوان نمائندگان نے بھی اس بل کومنظور کر لیا تھا۔

اس وقت بھی وائٹ ہاؤس کا کہنا تھا کہ بل سے نہ صرف ریاض - واشنگٹن تعلقات بلکہ دوسرے ملکوں میں بھی امریکی مفادات متاثر ہوں گے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری