پاک چین مشترکہ بحری مشقوں کی جاسوسی کے لیے بھارتی جاسوسی کی کوشش ناکام

خبر کا کوڈ: 1244031 خدمت: پاکستان
نیروی دریایی پاکستان

پاک بحریہ کی آبدوزوں نے بھارتی آبدوز کی جانب سے پاکستان کی سمندری حدود کی خلاف ورزی کرنے پر فوری کارروائی کرتے ہوئے اپنی سمندری حدود سے باہر نکال دیا ہے۔

خبررساں ادارے تسنیم کی رپورٹ کے مطابق، پاکستانی بحریہ کی آبدوزوں نے بھارتی آبدوز کی جانب سے پاکستان کی سمندری حدود کی خلاف ورزی کرنے پر فوری کارروائی کرتے ہوئے اپنی سمندری حدود سے باہر نکال دیا ہے۔

پاک بحریہ کے ذرائع نے کہا ہے کہ بھارت نے اگر سمندری راستے سے جارحیت کی کوشش کی تو یہاں بھی اسے پاکستان منہ توڑ جواب دے گا۔

سرکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت پاکستان اور چین مشترکہ بحری مشقوں میں مصروف ہیں اور بھارتی آبدوزوں کی جانب سے اس حوالے سے بحری جاسوسی کی کوشش کے لئے پاکستانی سمندری حدود کی خلاف ورزی کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ چین کے دو بحری جنگی بیڑے کل کراچی میں تھے اور آج بین الاقوامی سمندری حدود میں مشقیں کررہی ہیں۔

چین نے گوادر کی بندرگاہ کے راستے بحری کارگو بھیجنے کا آغاز بھی کردیا ہے اور سی پیک منصوبے کے ذریعے پاکستان و چین ترقی کے نئے دور کا آغاز کررہے ہیں لہٰذا بھارت ان تمام معاملات پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

فوجی امور کے تجزیہ نگار ریٹائرڈ جنرل امجد شعیب نے کہا ہے کہ بھارت کو ان اوچھی حرکتوں سے باز رکھنے کے لیے اقوام متحدہ کے ذریعے متنبہ کیا جاناچاہیے جبکہ پاک بحریہ ک ریٹائرڈٖ وائس ایڈمرل تسنیم احمد نے اس سلسلے میں کہا کہ یہ پاک بحریہ کے سرویلنس نظام کی کامیابی ہے کہ انہوں نے بھارتی جاسوسی مشن کو نہ صرف چیک کرلیا بلکہ کامیابی سے اسے ناکام بھی بنا دیا۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری