داعش نے 100 سالہ صوفی بزرگ کا سر قلم کردیا + تصاویر

مصر میں داعش سے وابستہ دہشت گرد ٹولہ ''انصار بیت المقدس'' نے ایک اعلیٰ مذہبی رہنما کو وحشیانہ طریقے سے مار دیا ہے۔

داعش نے 100 سالہ صوفی بزرگ کا سر قلم کردیا + تصاویر

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، مصری ذرائع ابلاغ نے اعلان کیا ہے کہ داعش سے وابستہ دہشت گرد ٹولہ ''انصار بیت المقدس'' نے 100 سالہ بزرگ کو صوفی ہونے کے الزام میں ان کے بچوں کے سامنے تلوار سے سر قلم کرکے قتل کردیا۔

100 سالہ صوفی بزرگ نابینا تھے جنہیں ان کے بچوں کے سامنے قتل کردیا گیا۔

دہشت گردوں کا کہنا تھا کہ وہ جادو اور سحر کیا کرتے تھے اس وجہ سے انہیں قتل کردیا گیا ہے۔

فلسطینی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ شیخ ابو حراز دہشت گردوں کے خلاف تھے اور کئی دیہاتوں میں سینکڑوں لوگ ان کو ایک بزرگ صوفی رہنما کی حیثیت سے مانتے تھے جس کی وجہ سے دہشت گرد پہلے بھی انہیں مارنے کی دھمکیاں دے چکے تھے۔

100 سالہ بزرگ کے سرقلم کرنے پر مصر بھر میں غم و غصہ پایا جاتاہے اور مصریوں نے اس کی بھر پور مذمت کی ہے۔

واضح رہے کہ شیخ ابو حراز امریکہ اور اسرائیل کے سر سخت مخالف تھے اور ہمیشہ بیت المقدس اور فلسطینی عوام کے حق میں آواز بلند کرتے رہتے تھے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی دنیا خبریں
اہم ترین دنیا خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری