ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ؛

پاک ایران کی 30 سالہ افغان مہاجرین کی میزبانی قابل تحسین ہے

خبر کا کوڈ: 1258188 خدمت: ایران
پناهندگان افغان

ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں کسی بھی ملک کی علاقائی سالمیت کے خلاف طاقت کے استعمال یا دھمکی سے گریز کرنے اور ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کرنے کے عزم کااظہار کیا گیا ہے جب کہ افغان مہاجرین کی 30 سال سے میزبانی پر پاکستان اور ایران قابل تحسین ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، امرتسرمیں ہونے والی ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ جاری کردیا گیا جس کے مطابق، کسی بھی ملک کی علاقائی سالمیت کے خلاف طاقت کے استعمال یا دھمکی سے گریز کرنے اور ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا گیا ہے۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ مشترکہ چیلنج سے نمٹنے اور سیکیورٹی استحکام کے فروغ کے لیے علاقائی تعاون اہم ذریعہ ہے جس کے لئے اختلافات پرامن طور پر حل کرنے کے عزم پر قائم ہیں۔

مشترکہ اعلامیے کے مطابق، افغان مہاجرین کی 30 سال سے میزبانی پر پاکستان اور ایران قابل تحسین ہیں تاہم افغانستان میں محفوظ آباد کاری تک میزبان ممالک پناہ گزینوں کو اپنے ممالک میں رکھیں جب کہ عالمی برداری افغان مہاجرین کے لیے دل کھول کرامداد دے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا کہ دنیا کو دہشت گردی، انتہاپسندی، بنیاد پرستی اور فرقہ واریت جیسے چیلنجز کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کے لیے رکن ممالک تعاون کو فروغ دیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری