ڈاکٹر طاہر القادری:

قائد اعظم کا پاکستان آج پانامہ کرپٹ حکمرانوں کے نرغے میں ہے

خبر کا کوڈ: 1258439 خدمت: پاکستان
طاهر القادری

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے نشتر پارک میں منعقدہ امن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے حکمرانوں نے اس ملک کو لوٹنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے نشتر پارک میں منعقدہ امن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ قائد اعظم کا پاکستان آج کرپٹ حکمرانوں کے نرغے میں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے حکمرانوں نے اس ملک کو لوٹنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑا ہے۔

انہوں نے دہشتگردی کے حوالے سے کہا کہ جس معاشرے میں انصاف، تعلیم و علاج اور روزگار نہ ہو اس معاشرے میں انتہا پسندی جنم لیتی ہے لہٰذا دہشت گردی اور انتہاپسندی کے خلاف آپریشن سے افراد کو تو ختم کیا جا رہا ہے مگر دہشت گردی اور انتہاپسندی کی سوچ اور فکر کا خاتمہ ضروری ہے۔

ڈاکٹر قادی نے کہا کہ دہشت گردی اور انتہاپسندی کو جنم دینے میں مذہبی، سیاسی، معاشی، معاشرتی اور  قومی و بین الاقوامی عوامل شامل ہیں۔

عوامی تحریک کے سربراہ کا کہنا تھا کہا کہ کراچی میں ہونے والی ہلاکت و تباہی کی مثال پاکستان کے کسی دوسرے شہر سے نہیں ملتی۔

انہوں نےکہا کہ جس فکر میں گردنیں کٹیں، بے گناہ انسانوں پر گولیاں چلیں، لوٹ مار ہو وہ اسلام ہرگز نہیں ہے، یہ کفر سے بھی بدتر نظریہ ہے۔

عوامی تحریک کے سربراہ نے اس سے پہلے بھی کہا تھا کہ کراچی آپریشن کی کامیابی کی ضمانت پنجاب سے دہشت گردی کے خاتمے سے جڑی ہوئی ہے جب تک پنجاب سے دہشت گرد ختم نہیں کئے جاتے تب تک امن بحال نہیں ہو سکتا کیونکہ پنجاب میں دہشت گردوں کو پناہ ملتی ہے۔

    تازہ ترین خبریں