سندھ طاس معاہدہ؛ پاک بھارت باضابطہ بات چیت آئندہ ہفتے شروع ہونے کا امکان

خبر کا کوڈ: 1270385 خدمت: پاکستان
هند و پاکستان

سندھ طاس معاہدے سے متعلق بات چیت مثبت انداز میں آگے بڑھنے لگی جس کے تحت معاملے پر باضابطہ بات چیت کا دورہ آئندہ ہفتے شروع ہونے کا امکان ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم نے روزنامہ ایکسپریس کے حوالے سے بتایا ہے کہ انڈس واٹر کمیشن ذرائع کا کہنا ہےکہ معاملے پر بھارت کی جانب سے مذاکرات کا مثبت جواب ملا ہے جس کے بعد باضابطہ بات چیت کا دور آئندہ ہفتے شروع ہونے کا امکان ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ عالمی بینک کی طرف سے متنازعہ ڈیموں اور منصوبوں سے متعلق تنازعات کے حل کے لیے دی گئی ڈیڈ لائن کے اندر تنازعہ کے حل سے متعلق دونوں ملکوں نے اپنے طور پر ایک مرتبہ پھر بات چیت کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیے عنقریب بھارتی وفد پاکستانی دعوت پر لاہور کا دورہ کر سکتا ہے اور اس مناسبت سے انڈس واٹر کمشنر آصف بیگ مرزا کی طرف سے خط بھی تحریر کردیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق بھارت نے بات چیت کے لیے گرین سگنل تو دیا ہے لیکن دورے سے متعلق ابھی کوئی تاریخ یا دن فائنل نہیں ہو سکا، اس حوالے سے انڈس واٹر کمیشن کے حکام امکان ظاہر کررہے ہیں کہ مذاکرات اور بات چیت کا باقاعدہ دور آئندہ ہفتے سے باضابطہ شروع ہو جائے گا۔

واضح رہے کہ سندھ طاس معاہدے کے حوالے سے بھارت کی طرف سے دریائے نیلم پر330 میگاواٹ کے کشن گنگا ڈیم اور دریائے چناب پر850 میگاواٹ کے منصوبے کی تعمیر پر پاکستان نے اپنے شدید تحفظات کا اظہار کیا تھا جس پر دونوں فریق عالمی بینک کے پاس گئے تاہم عالمی بینک نے اب دونوں ملکوں کو اپنے طور پر مسئلے کا حل تلاش کرنے کا موقع دیا ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری