بھارتی خفیہ ایجنسیوں میں اہم تقرریاں/ پاکستان کے بلوچستان کے خلاف سازشیں تیز کرنے کا امکان

خبر کا کوڈ: 1270436 خدمت: دنیا
بھارتی را

بھارتی خفیہ ادارے را کے بلوچستان ڈیسک کے سربراہ کو را کا سربراہ بنادیا گیا جس کی وجہ سے اب بھارت کی جانب سے پاکستان بالخصوص بلوچستان میں سازشیں تیز کرنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، بھارتی خفیہ ادارے را کے بلوچستان ڈیسک کے سربراہ کو را کا سربراہ بنادیا گیا جس کی وجہ سے بھارت کی جانب سے پاکستان اور بلوچستان میں سازشیں تیز کرنے کا سلسلہ بڑھنے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق انیل دھسمانا نامی افسر بھارت کی خفیہ ایجنسی "را" کا نیا سربراہ جبکہ راجیو جین کو انٹیلی جنس بیورو کا نیا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

را کا نیا چیف جنوری میں راجندر کھنا کی جگہ لے گا۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ 1981ء میں مدھیا پردیش پولیس ڈپارٹمنٹ میں شامل ہونے والے انیل کمار دھسمانا کو ایوی ایشن ریسرچ سینٹر کے سربراہ ہونے کے ساتھ "را" میں نمبر ٹو کی حیثیت حاصل رہی ہے۔

بلوچستان کے معاملات اور انسداد دہشت گردی پر عبور دھسمانا کے تقرر کی بڑی وجہ بنا، وہ پاکستان اور افغانستان کی اندرونی معاملات میں کردار ادا کر چکا ہے۔

نیل کمار دھسمانا نے یورپی ممالک میں "را" آپریشنز کی سربراہی بھی کی۔

اطلاعات کے مطابق بلوچستان میں گوادر بندرگاہ کی تعمیر کو روکنے میں بھی دھسمانا کا اہم کردار رہا ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری