جامعہ روحانیت بلتستان کے صدارتی انتخابات، سید احمد رضوی صدر منتخب

جامعہ روحانیت بلتستان کے زیر اہتمام مرکزی صدر اور مجلس روحانیت کے انتخابات 16 ربیع الاول کو دن ایک بجے سے شام آٹھ بجے تک امام بارگاہ بلتستانیہ قم میں منعقد ہوئے جس میں بلتستان کے 94 فیصد علما و طلاب نے شرکت کرکے ووٹ کاسٹ کیا۔

جامعہ روحانیت بلتستان کے صدارتی انتخابات، سید احمد رضوی صدر منتخب

تسنیم خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، الیکشن کمیشن کے ترجمان حجۃ الاسلام والمسلمین شیخ مشتاق حکیمی کا کہنا ہے کہ  صدارتی امیدوار کل سات تھے جن میں سے پانچ افراد انتخابات سے قبل ہی دستبردار ہوئے جس کے نتیجے میں صدارتی انتخابات کے لئے مقابلہ حجۃ الاسلام سید احمد رضوی اور حجۃ الاسلام شیخ نثار اتحادی کے مابین ہوا، تاہم سید احمد رضوی 306 ووٹ لیکر دوسال کے لے جامعہ روحانیت بلتستان کا صدر منتخب ہوئے۔

علاوہ ازیں مجلس جامعہ روحانیت بلتستان کے لئے کل 49 افراد نے بعنوان امیدوار انتخابات میں حصہ لیا جن میں سے 25 افراد دوسال کے لے جامعہ روحانیت کی مجلس کے رکن منتخب ہوگئے ہیں۔

جامعہ روحانیت کے آئین کے مطابق اجرائی کاموں کے مکمل اختیارات صدر جبکہ قانون گذاری  کا حق مجلس کے پاس ہے۔

انتخابات کے نتایج کی تقریب میں الیکشن کمیشن کے چئیرمین جناب حجۃ الاسلام والمسلمین سید محمد سعید موسوی، موجودہ صدر حجۃ الاسلام والمسلمین شیخ محمدعلی ممتاز، حجۃ الاسلام شیخ نثار اتحادی اور منتخب صدر حجۃ الاسلام سید احمد رضوی نے قم میں زیر تعلیم بلتستان کے تمام علما اور طلاب کرام کا شکریہ ادا کیا اور باہمی اتحاد و وحدت کیساتھ اسلام اور ملک عزیز پاکستان کو در پیش  چلنجز کا مقابلہ کرنے پر زور دیا۔

واضح رہے کہ جامعہ روحانیت بلتستان، بلتستان سے تعلق رکھنے والے طلاب کی ایک تنظیم ہے جو کہ پاکستان میں فلاحی اور تعلیمی سرگرمیوں میں مصروف ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری