پاکستان تحریک انصاف:

پنجاب حکومت کی ہزاروں خطرناک اشتہاری دہشت گردوں کی گرفتاری میں ناکامی

خبر کا کوڈ: 1274672 خدمت: پاکستان
عندلیب عباس

تحریک انصاف کی خاتون رہنما عندلیب عباس نے پنجاب حکومت سے خط میں کہا ہے کہ صوبے میں 1000 سے زائد خطرناک اشتہاری اور دہشت گرد آزاد گھوم رہے ہیں۔ پنجاب حکومت بتائے ان خطرناک مجرموں کی گرفتاری میں کیوں ناکام ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، پاکستان تحریک انصاف کی خاتون رہنما  کا پنجاب حکومت کو خط. اشتہاری ملزمان اور دہشت گردوں کی تفصیلات آئین کے آرٹیکل انیس اے اور معلومات تک رسائی کے قانون کے تحت 14روز کے اندر طلب کرلیں.

تحریک انصاف کی خاتون رہنما عندلیب عباس نے پنجاب حکومت سے خط میں کہا ہے کہ شعبہ انسداد دہشت گردی نے 25 نومبر کو لاہور ہائیکورٹ میں رپورٹ جمع کروائی ہے جس میں بتایا گیا کہ صوبے میں 1000 سے زائد خطرناک اشتہاری اور دہشت گرد آزاد گھوم رہے ہیں۔

انہوں نے تاکید کی ہے کہ پنجاب حکومت بتائے ان خطرناک مجرموں کی گرفتاری میں کیوں ناکام ہے، پنجاب میں کئے گئے چھپن ہزار آٹھ سو چونتیس کومبنگ آپریشنز میں بھی حکومت انکی گرفتاری میں کیوں ناکام رہی۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ گرفتار کئے گئے اشتہاریوں میں سے درجنوں پولیس کی گرفت سے فرار ہونے میں کامیاب رہے۔ حکومت نے دہشت گردوں اور اشتہاریوں کے فرار کے ذمہ دار عناصر کیخلاف کیا کارروائی کی۔

ان کا کہنا تھا کہ انسداد دہشت گردی کے بجٹ سے 793 ملین کیوں کم کئے گئے اور یہ رقم کہاں خرچ کی گئی۔

عندلیب عباس نے کہا کہ پولیس اور انسداد دہشت گردی ڈیپارٹمنٹ کی ناقص کارکردگی سے نیشنل ایکشن پلان کے نفاذ پر انتہائی منفی اثرات پڑے، حکومت نے پولیس اور شعبہ انسداد دہشت گردی کی اصلاح کار کیلئے کیا اقدامات اٹھائے۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں اور اشتہاریوں کے آزاد گھومنے سے پنجاب کے شہریوں کے جان و مال انتہائی خطرات کی زد میں ہیں، پولیس کی ناکامی کے باوجود حکومت نے شہریوں کے تحفظ کی خاطر رینجرز کیوں نہیں طلب کئے۔

انہوں نے خط میں کہا ہے کہ حکومت آئین کے آرٹیکل انیس اے اور معلومات تک رسائی کے قانون کے تحت چودہ روز کے اندر مصدقہ جواب دے۔

    تازہ ترین خبریں