5جنوری؛ کشمیریوں کا "یوم حق خودارادیت"؛

67 سال گزرنے کے باوجود اقوام متحدہ کشمیر قرارداد پر عملدرآمد کرنے سے قاصر!

خبر کا کوڈ: 1288675 خدمت: اسلامی بیداری
کشمیر

5 جنوری 1949 کو اقوام متحدہ نے قرارداد منظور کی تھی جس میں کشمیری عوام کے بنیادی انسانی حقوق کو تسلیم کرتے ہوئے انہیں حق خودارادیت دلانے کا وعدہ کیا گیا تھا جس کے بعد آج تک کشمیری عوام دنیا بھر میں اس دن کو "یوم حق خودارادیت" کے عنوان سے مناتے ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، دنیا بھر میں آج کشمیری یوم حق خود ارادیت کا دن منارہے ہیں جب کہ اس موقع پر آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں مختلف تقاریب کا بھی اہتمام کیا گیا ہے۔

مقبوضہ و آزاد کشمیر اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں آباد کشمیری آج یوم حق خود ارادیت منارہے ہیں جب کہ اس موقع پر پاکستان بھر میں مختلف تقریبات، سیمنار اور ریلیوں کا انعقاد کیا گیا ہے۔

اسلام آباد میں منعقد کشمیر سے متعلق بین الاقوامی پارلیمانی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ اور شناخت ہے اور ہم کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے اور بین الاقوامی اداروں کی توجہ اس جانب مبذول کراتے رہیں گے۔

دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں نظر بند حریت قیادت کی جانب سے اس موقع پر جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 5 جنوری کا دن کشمیریوں کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اب اقوام متحدہ کی قرار دادوں پر عمل درآمد کا وقت آگیا ہے لہٰذا بھارت کو چاہیے کہ ان قرار داد پر عمل کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو کشمیری عوام کی خواہش کے مطابق حل کرے۔

واضح رہے کہ 5 جنوری 1949 کو اقوام متحدہ نے قرارداد منظور کی تھی جس میں کشمیری عوام کے بنیادی انسانی حقوق کو تسلیم کرتے ہوئے انہیں حق خودارادیت دلانے کا وعدہ کیا گیا تھا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اقوام متحدہ نے کشمیر قرارداد منظور کرنے کے 67 سال گزرنے کے باوجود مجرمانہ خاموشی اختیار کی ہے جو جہان اسلام کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔

    تازہ ترین خبریں