فلسطینی جوان نے اسرائیلی فوجیوں کو ٹرک کے تلے روند ڈالا، 4 ہلاک

خبر کا کوڈ: 1291755 خدمت: اسلامی بیداری
فلسطین

اسرائیل میں ایک شخص نے تیز رفتار ٹرک سے فوجیوں کے ایک گروپ کو کچل ڈالا جس کے نتیجے میں 4 فوجی ہلاک اور 15 زخمی ہوگئے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، اسرائیل میں ایک شخص نے تیز رفتار ٹرک سے فوجیوں کے ایک گروپ کو کچل ڈالا جس کے نتیجے میں 4 فوجی ہلاک اور 15 زخمی ہوگئے۔

فرانسیسی خبر رساں اداے اے ایف پی کے مطابق جائے وقوع پر موجود ایک امدادی کارکن نے بتایا کہ اس واقعے کے نتیجے میں 4 فوجی اہلکار ہلاک ہوئے ہیں جبکہ پولیس اس واقعے کی ایک سوچے سمجھے حملے کے طور پر اس کی تحقیقات کررہی ہے۔

اسرائیلی پولیس اور ریسکیو سروسز نے بتایا کہ یہ واقعہ یروشلم میں پیش آیا جہاں اسرائیلی فوجی ایک بس سے اتر رہے تھے کہ اچانک ایک تیز رفتار ٹرک ان کی طرف آیا اور ان کے اوپر چڑھ گیا۔

پولیس ترجمان لوبا سامری نے اے پی کو بتایا کہ جوابی کارروائی میں حملہ آور کو بھی ہلاک کردیا گیا ہے۔

ایک عینی شاہد کے مطابق کچھ لوگوں کو کچلنے کے بعد ڈرائیور ٹرک کو ریورس کرکے واپس آرہا تھا تاکہ مزید لوگوں کو ٹکر مار سکے، اس سے واضح ہوتا ہے کہ یہ سوچا سمجھا حملہ تھا۔

اسرائیلی ریسکیو سروس ایم ڈی اے کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والوں میں تین خواتین فوجی اہلکار اور ایک مرد شامل ہے اور ان سب کی عمریں 20 سے 25 کے درمیان تھیں جبکہ زخمیوں میں سے ایک کی حالت تشویش ناک ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس ایک سال تک اسرائیلی فورسز کی جانب سے فلسطینی شہریوں پر فائرنگ اور فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلی فوجیوں پر حملے کے واقعات رونما ہوتے رہے تھے تاہم چند مہینوں سے اس میں بہت حد تک کمی واقع ہوگئی تھے۔

یہ تین ماہ کے دوران اسرائیلی فوجیوں کی ہلاکت کا پہلا واقعہ ہے۔

ستمبر 2015 سے شروع ہونے والے حملوں کے سلسلے میں 40 اسرائیلی فوجی جبکہ اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے 229 فلسطینی شہری ہلاک ہوئے تھے۔

اسرائیل کا یہ دعویٰ ہے کہ ہلاک ہونے والے زیادہ تر وہ تھے جو فوجیوں پر حملہ کرنے کے دوران مارے گئے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری