گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں ایک اور جہاز میں آتشزدگی

خبر کا کوڈ: 1292325 خدمت: پاکستان
گڈانی

صوبہ بلوچستان کے ساحلی علاقے گڈانی کے شپ بریکنگ یارڈ میں کھڑے ایک ناکارہ جہاز میں آتشزدگی کے نتیجے میں 5 مزدور جھلس کر جاں بحق جبکہ ایک زخمی ہوگیا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، صوبہ بلوچستان کے ساحلی علاقے گڈانی کے شپ بریکنگ یارڈ میں کھڑے ایک ناکارہ جہاز میں آتشزدگی کے نتیجے میں 5 مزدور جھلس کر جاں بحق جبکہ ایک زخمی ہوگیا۔

پولیس کے مطابق شب بریکنگ یارڈ کے پلاٹ نمبر 60 میں کھڑے ایل پی جی کے ناکارہ جہاز پر کام جاری تھا کہ اس میں آگ لگی۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی فائر بریگیڈ کا عملہ متاثرہ مقام کی طرف روانہ ہوگیا۔

پولیس نے بتایا کہ حادثے کے وقت جہاز میں 50 سے زائد مزدور کام کررہے تھے۔

پولیس کے مطابق جہاز میں سے 5 مزدوروں کی جھلسی ہوئی لاشیں برآمد کی گئی جبکہ 3 مزدور تاحال لاپتہ ہیں۔

دوسری جانب گڈانی لیبر ایسوسی ایشن کے صدر بشیر محمود دانی نے 8 مزدوروں کے لاپتہ ہونے کا دعویٰ کیا۔

پولیس کے مطابق مذکورہ جہاز شپ بریکنگ یارڈ ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین رضوان دیوان فاروقی کی ملکیت تھا، جنھوں نے گذشتہ برس نومبر میں اپنے عہدے سے استعفیٰ دیا تھا۔

پولیس کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ وہی جہاز ہے جس میں گذشتہ برس دسمبر میں بھی آگ لگی تھی۔

اس سے قبل گذشتہ ماہ 22 دسمبر کو بھی شپ بریکنگ یارڈ کے پلاٹ نمبر 60 کے ایک ناکارہ جہاز میں آگ بھڑک اٹھی تھی، تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔

گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں آتشزدگی کا بدترین واقعہ گذشتہ برس نومبر میں پیش آیا تھا، جب ناکارہ آئل ٹینکر میں ہونے والے دھماکوں اور آگ لگنے کے نتیجے میں 27 مزدور ہلاک جبکہ 58 زخمی ہوگئے تھے۔

پاکستان میں گذشتہ چند سالوں میں آتشزدگی اور دیگر واقعات میں مزدوروں کی ہلاکت میں غیر معمعولی اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ یہاں فیکڑیوں اور دیگر تجارتی مراکز میں کام کرنے والے مزدوروں کی حفاظت کے انتظامات ناکافی اور بین الاقوامی معیار کے مطابق نہیں ہیں۔

مزدوروں کی حفاظت کے لیے انتظامات نہ ہونے کے برابر ہیں جس کے باعث اکثر اس قسم کے حادثات رونما ہوتے رہتے ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری