جرمنی نے سی پیک کا حصہ بننے کی خواہش ظاہر کر دی

خبر کا کوڈ: 1303126 خدمت: دنیا
پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ

جرمن سفیر اینا لیپل نے کہا ہے کہ جرمن کمپنیاں تجارتی تعلقات میں بہتری کیلئے پاک چین اقتصادی راہداری میں شامل ہونا چاہتی ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، جرمن سفیر اینا لیپل اور دفاعی اتاشی کرنل کلاز ویل ہیلم نے نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ کے ساتھ ملاقات کی جس دوران باہمی تعلقات کو مزید مستحکم کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اینا لیپل نے کہا کہ جرمنی، یورپ میں پاکستان کا دوسرا بڑا تجارتی پارٹنر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جرمن کمپنیاں تجارتی تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کیلئے سی پیک منصوبے میں شمولیت کی خواہشمند ہیں۔

جرمن سفیر نے پاکستان میں کام کرنے کے تجربہ پر بھی روشنی ڈالی اور کہا کہ پاکستان اور جرمنی کے درمیان بہترین تعلیمی اور معاشی تعلقات ہیں جن سے مشترکہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کی راہ ہموار ہو گی۔

ملاقات کے دوران خطے میں سیکورٹی سے متعلق خدشات اور استحکام سے متعلق تبادلہ خیال بھی کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات میں اضافے کی بہت صلاحیت ہے۔ انہوں نے انسانی وسائل کی ترقی، سیکورٹی، تجارت اور دفاع سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کی اہمیت پر بھی زور دیا اور دہشت گردی کے خلاف پاکستان کے اقدامات کو بھی سراہا۔

لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ نے واضح کیا کہ پاکستان ایک ابھرتا ہوا ملک ہے اور جلد ہی دنیا کو جوڑنے اور بڑی اقتصادی سرگرمی کا مرکز بھی بن جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پر رابطہ ہماری وجہ سے آئے گا۔

لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر جنجوعہ نے جرمن سفیر کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور اس مسئلے کے حل کیلئے عالمی دباﺅ کی اہمیت سے بھی آگاہ کیا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل برطانیہ، سعودی عرب، ایران اور افغانستان بھی پاک چین اقتصادی راہداری کا حصہ بننے میں دلچسپی ظاہر کر چکے ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری