7 مسلم ممالک کی فہرست میں اضافے کا امکان / پاکستان بھی خارج از امکان نہیں

وائٹ ہاوٌس کے چیف آف اسٹاف رائنس پریبس کہتے ہیں کہ ڈونلڈ ٹرمپ سات مسلم ممالک کی پابندی کی فہرست میں اضا فہ کرسکتے ہیں۔

رائنس پریبس

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، وائٹ ہاوٌس کے چیف آف اسٹاف رائنس پریبس کہتے ہیں کہ مسلم ممالک کی پابندی کی فہرست میں مزید مسلم ممالک شامل کرسکتے ہیں۔

انٹرویو میں ٹی وی اینکر نے سوال پوچھا تھا کہ کیا مستقبل میں سعودی عرب، پاکستان، افغانستان اور مصر پر بھی پابندی لگا ئی جا سکتی ہےو جس کے جواب میں رائنس پریبس نے واضح انکار یا اقرار کئے بنا کہا کہ امریکہ داخلے پر پابندی کی فہرست میں مزید مسلم ممالک کو بھی شامل کیا جاسکتا ہے جبکہ فی الحال ایسے ملکوں میں آنے اور وہاں سے نکلنے والے افراد پر نظر رکھی جائے گی۔

وائٹ ہاوٌس کے چیف آف اسٹاف رائنس پریبس نے انٹرویو کے دوران واضح کیا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سات مسلم ممالک کے افراد پر ویزا پابندی امریکیوں کی حفاظت کے لیے لگائی ہے۔ امریکہ کی قومی سلامتی اور امریکیوں کے تحفظ کے لئے صدر ٹرمپ پابندی کی اس فہرست میں اضافہ بھی کرسکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ اس معاملے میں بہت سنجیدہ ہیں اور امریکہ کی سلامتی کے لئے وہ کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں کیونکہ امریکہ اور امریکیوں کا تحفظ ان کی پہلی ترجیح ہے۔

رائنس پریبس کا کہنا تھا کہ جن سات ممالک پر پابندی عائد کی گئی ہے ان ممالک سے واپس آنے والے امریکیوں کو بھی سخت جانچ پڑتال کا سامنا کرنا پڑے گا۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری