کشمیریوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹنے والے, بچھڑے کا کٹا سر برداشت نہ کر سکے

خبر کا کوڈ: 1315291 خدمت: اسلامی بیداری
گاو پرستی در هند7

مقبوضہ کشمیر میں بسنے والے انسانوں پر ظلم کی انتہا کرنے والے ہندو، گجرات میں بچھڑے کا کٹا سر دیکھ کر آپے سے باہر ہو گئے جس کی وجہ سے شہر بھر میں فسادات پھوٹ پڑے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق، بھارتی گجرات میں گائے کے بچھڑے کا کٹا ہوا سر ملنے کے بعد فسادات شروع ہوگئے ہیں۔

پولیس کی جانب سے انتہا پسند ہندوﺅں پر قابو پانے کیلئے آنسو گیس کا استعمال اور لاٹھی چارج کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق واقعہ گجرات کے شہر سورت کے نواحی علاقے گودودارا میں پیش آیا جہاں ایک سڑک سے بچھڑے کا کٹا ہوا سر ملنے کے بعد انتہا پسند ہندو مشتعل ہو گئے۔

مشتعل افراد نے کئی دکانوں میں توڑ پھوڑ کر کے نذر آتش کر دیا، کاروباری مراکز بند کرا دئیے اور پولیس پر پتھر اﺅ کیا۔

مقامی پولیس حکام کے مطابق پولیس نے مشتعل افراد پر قابو پانے کیلئے مجبورا لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کے 20 شیل فائر کئے۔

پولیس حکام کے مطابق صورت حال پر قابو پا لیا گیا ہے اور علاقے میں گشت بڑھا دیا گیا ہے۔

اسی زمرے میں پولیس نے کئی افراد کو حراست میں لے کر تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

    تازہ ترین خبریں