سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پنجاب:

ملت جعفریہ پاکستان؛ ایک طرف دہشتگردوں کا نشانہ تو دوسری طرف سی ٹی ڈی کی کاروائیاں

خبر کا کوڈ: 1320580 خدمت: اسلامی بیداری
مبارک موسوی

علامہ مبارک موسوی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پنجاب نے کہا ہے کہ ڈاکٹر قاسم علی کی شہادت پر خاموش نہیں بیٹھیں گے، قاتل گرفتار نہ ہوئے تو ہم سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہونگے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق ساہیوال میں مجلس وحدت مسلمین کے رہنما ڈاکٹر قاسم علی کی شہادت قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ناکامی کا نتیجہ ہے، پنجاب میں ملت جعفریہ کیخلاف منظم منصوبہ بندی کے تحت ٹارگٹ کلنگ جاری ہے، ساہیوال میں دوماہ کے اندر ہمارے تین پرامن کارکنوں کو نشانہ بنایا گیا، ڈاکٹر قاسم علی کی شہادت پر ہم خاموش نہیں بیٹھیں گے، قاتل گرفتار نہ ہوئے تو ہم سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہونگے۔

ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ مبارک علی موسوی نے صوبائی سیکرٹریٹ میں ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردوں کیخلاف کاروائی کرنے والے ادارے پنجاب کے مختلف اضلاع میں ہمیں ہراساں کرنے میں مصروف ہیں، پنجاب میں ملت جعفریہ کو ایک طرف دہشتگرد نشانہ بنا رہے ہیں تو دوسری طرف سی ٹی ڈی ہمارے خلاف کاروائیوں میں مصروف ہیں، پنجاب سے ہمارے علماء اور پرامن پڑھے لکھے نوجوان گذشتہ کئی مہینوں سے لاپتہ ہیں۔

علامہ مبارک موسوی نے مزید کہا کہ پنجاب میں کالعدم دہشتگرد گروہ کو مکمل آزادی حاصل ہے، دہشتگردوں کے سہولت کاروں اور سیاسی سرپرستوں کیخلاف کاروائی کرنے میں ہمارے حکمران اور قانون نافذ کرنے والے ادارے مصلحت پسندی کا شکار ہے، نیشنل ایکشن پلان کے نام پر دہشتگردی کے سب سے زیادہ متاثرہ فریق ملت جعفریہ کو ہی نشانہ بنایا جا رہا ہے، وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب ساہیوال میں جاری ٹارگٹ کلنک کے واقعات پر نوٹس لیں، بصورت دیگر ہم پنجاب بھر میں احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہونگے۔

    تازہ ترین خبریں