اسرائیل کے خلاف سخت گیر موقف کے حامل رہنما غزہ میں حماس کے نئے قائد منتخب

خبر کا کوڈ: 1328338 خدمت: اسلامی بیداری
السنوار

فلسطین کے نڈر رہنما جو صہیونی محفلوں میں حماس کے قوی ترین مرد کے نام سے جانے جاتے ہیں، فلسطینی تنظیم کے قائد منتخب کئے گئے ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق فلسطینی تنظیم حماس کی جناب سے اسرائیل کے خلاف سخت گیر موقف کے حامل یحیی السنوار کو اپنے نئے قائد کے طور پر منتخب کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق یحیی سِنوار حماس پولٹ بیورو کے نئے چیئرمین ہوں گے۔

انہوں نے اسماعیل حانیہ کے جانشین کے طور پر یہ عہدہ سنبھالا ہے۔

یحیی سِنوار کو 1988 میں دہشت گردانہ سرگرمیوں کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور چار مرتبہ عمر قید کی سزا ہونے کے بعد انہوں نے کئی برس اسرائیلی جیلوں میں گزارے ہیں۔

انہیں ایک ہزار سے زائد دیگر فلسطینی قیدیوں کے ہمراہ 2011ء میں مغوی اسرائیلی فوجی گیلاد شالیت کے بدلے میں رہائی ملی تھی۔

حماس گزشتہ ایک عشرے سے غزہ پٹی کو کنٹرول کر رہی ہے جبکہ اسرائیل نے اس مقبوضہ علاقے کی مکمل ناکہ بندی کر رکھی ہے۔

السنوار حماس کے سیکورٹی اداروں کے بانیوں میں سے ایک ہیں جو صہیونی جاسوسوں کے تعاقب کی ذمہ داری سنبھالے ہوئے ہیں۔

السنوار کے قائد بننے سے، اسرائیلی حکومت حماس کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کیلئے بلا واسطہ مذاکرات کا انتظار کریں گے کیونکہ تل ابیب حماس کے نئے قائد کو قیدیوں کے تبادلے سے متعلق مذاکرات میں سخت گیر موقف کے حامل رہنما گردانتے ہیں۔

 

 

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری