تحریک طالبان کے سرغنہ فضل اللہ کے بیٹے کی موت کی تصدیق

خبر کا کوڈ: 1333478 خدمت: پاکستان
مولانا فضل الله

تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی نے منڈان پولیس اسٹیشن پر ہونے والے خود کش کار بم دھماکے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ مبینہ خود کش حملہ آور طالبان چیف ملا فضل اللہ کا بیٹا تھا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان محمد خراسانی نے منڈان پولیس اسٹیشن پر ہونے والے خود کش کار بم دھماکے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ مبینہ خود کش حملہ آور طالبان چیف ملا فضل اللہ کا بیٹا تھا۔

یہ ذمہ داری اتوار کے روز جاری کردہ ایک بیان میں قبول کر لی گئی ہے۔

یاد رہے کہ دو ہفتے قبل بنوں کے علاقہ منڈان پولیس اسٹیشن پر مبینہ خودکش کار بم دھماکہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں دو پولیس اہلکار زخمی ہو ئے تھے۔

واضح رہے کہ تحریک طالبان، جماعت الاحرار اور داعش کے کارندوں کی جانب سے پاکستان بھر میں دہشتگرد کارروائیاں عروج پر ہیں۔

کہا جاتا ہے کہ سال 2017ء کے آغاز میں پاکستان کے سرحدی علاقے پاراچنار میں ہونے والے خونین دھماکے کے بعد دہشتگردوں کی وحشیانہ کارروائیوں کا ایک نیا منصوبہ شروع ہوچکا ہے جس کا مقصد عالمی دہشتگرد تنظیم داعش کی مملکت خداداد میں قدم جمانے کی ناکام کوشش ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری