امریکہ خطے میں طاقت کے توازن کو بگاڑنے کا اصل ذمہ دار ہے، ملیحہ لودھی

خبر کا کوڈ: 1381481 خدمت: پاکستان
ملیحہ لودھی

اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب کا کہنا ہے کہ مسئلہ کمشیر کا واحد حل مذاکرات ہی ہیں جب کہ امریکہ نے پورے خطے میں طاقت کا توازن بگاڑ دیا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق نیو یارک میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان مسئلہ کشمیر ایک مرتبہ پھر زندہ ہو گیا ہے اور مسئلے کے حل کے لئے دونوں ممالک کو مذاکرات کرنا ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ تنازع کشمیر اس وقت علاقائی امن و سلامتی کے لئے ایک اہم خطرہ ہے جب کہ پاکستان اور بھارت میں کشمیر کے مسئلے پر امریکا کی نمایاں حیثیت ہے لیکن حالیہ برسوں میں ہم نے محسوس کیا ہے کہ امریکا کا جنوبی ایشیا میں توازن کا فقدان ہے، خطے کے لئے ایک امتیازی جوہری پالیسی تھی لیکن بش انتظامیہ کی جانب سے بھارت کے ساتھ سول جوہری معاہدے سے خطے میں طاقت کا توازن بگڑ گیا ہے۔

قبل ازیں چین کے خبررساں ادارے کو انٹرویو میں ملیحہ لودھی نے پاک چین اقتصادی راہداری کو پاکستان کی خارجہ پالیسی کا کلیدی نکتہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم نہ صرف لوگوں کو بلکہ دلوں کو ایک دوسرے کے قریب لانے کے علاقائی روابط یقینی بنائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ علاقائی روابط کا مقصد اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ تمام لوگ معاشی تعاون اور تجارتی تعلقات سے مستفید ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے چین کے ساتھ اپنے تعلقات کا ہمیشہ خیرمقدم کیا ہے، چین کے صدر شی جن پنگ بھی کہہ چکے ہیں کہ دونوں ملک ایک دوسرے کے مضبوط بھائی ہیں۔

ملیحہ لودھی نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف اور پاکستان کے عوام دونوں اس بات پریقین رکھتے ہیں کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری تقدیر بدلنے کا منصوبہ ہے جب کہ چین کے صدر شی جن پنگ کا ایک پٹی ایک شاہراہ کا تصور پورے خطے کے لئے سود مند ثابت ہو گا۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری