پانامہ کیس: بڑی عدالت کا بڑا فیصلہ کل سنا دیا جائے گا+ پبلک پول

خبر کا کوڈ: 1383466 خدمت: پاکستان
پانامہ کیس

57 روز بعد کل 20 اپریل کو دوپہر 2 بجے پانامہ کیس کا محفوظ فیصلے کے ساتھ ساتھ اسحاق ڈار اور کیپٹن صفدر کی اہلیت کا فیصلہ بھی ہو گا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق پانامہ کیس کے فیصلے کی گھڑی آن پہنچی ہے۔ ملک کی سب سے بڑی عدالت ملکی تاریخ کا بڑا فیصلہ کل 20 اپریل کو دوپہر 2 بجے سنائے گی۔

میڈیا اور سیاسی جماعتوں سمیت پوری قوم کی نظریں سپریم کورٹ پر لگ گئی ہیں۔

وزیر اعظم اپنے منصب پر رہنے کے اہل ہیں یا نہیں؟ فیصلہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا پانچ رکنی بینچ عدالت نمبر 1 میں سنائے گا۔

اسحاق ڈار اور وزیر اعظم کے داماد کیپٹن (ر) صفدر کی اہلیت کا فیصلہ بھی اسی روز سنایا جائے گا۔

دوسری جانب سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ سنانے کی تاریخ کے اعلان کے بعد ملک بھر میں سیاسی ہلچل پیدا ہوگئی ہے۔

پاکستان تحریک انصاف نے آج پارٹی کی اعلیٰ قیادت کا اجلاس طلب کرلیا ہے جس میں پاناما کیس کے فیصلے کے بعد کی حکمت عملی تیار کی جائے گی ۔

اسی طرح سابق صدر آصف علی زرداری نے بھی پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماﺅں کو اسلام آباد طلب کرلیا ہے۔

سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ سنائے جانے کے بعد سابق صدر کی زیر صدارت اجلاس ہو گا جس میں آئندہ کی سیاسی حکمت عملی تیار کی جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف علی زرداری پہلے سے اسلام آباد میں موجود ہیں جبکہ پی پی چیئرمین بلاول بھٹو  زرداری بھی اسلام آباد پہنچ گئے ہیں۔

پی پی کے دیگر سینئر رہنماؤں کو بھی اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

ترجمان سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ عدالت نے پانامہ کیس کے فیصلے کے وقت سپریم کورٹ میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کی ہدایت جاری کردی ہے جبکہ کیس کا فیصلہ سننے والوں کو خصوصی پاسز جاری کئے جائیں گے.

یاد رہے کہ جسٹس آصف سعید کھوسہ، جسٹس شیخ عظمت سعید، جسٹس اعجاز افضل، جسٹس گلزار احمد اور جسٹس اعجاز الحسن پر مشتمل پانچ رکنی بینچ نے روزانہ کی بنیاد پر سماعت کے بعد پانامہ کیس کا فیصلہ 23 فروری کو محفوظ کیا تھا۔

پبلک پول: کیا سپریم کورٹ نواز شریف کو نااہل قرار دینے کی صورت میں وزارت عظمی سے ہٹا سکے گی۔۔؟  اپنی رائے دینے کے لئے یہاں کلک کریں۔

 

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری