فرانس صدارتی انتخابات / آج فیصلہ عوام کے ہاتھ میں

خبر کا کوڈ: 1386999 خدمت: دنیا
فرانس انتخابات

فرانس میں رجسٹرڈ ووٹروں کی کل تعداد چار کروڑ 48 لاکھ 34 ہزار ہے جو آج اپنا حق رائے دہی استعمال کر کے ملک کے مستقبل کا فیصلہ کریں گے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق 11 امیدوار آنکھوں میں فرانسیسی صدر کا سپنا سجائے میدان میں اتر آئےہیں۔

 تاہم فرانسیسی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ اس وقت اصل مقابلہ چار امیدواروں کے درمیان ہے، جن میں میرین ایل ری پین ، ایمانیول میکرون، فرانسوا فیلن اور یواں لیک میلنچن شامل ہیں۔

ان تمام امیدواروں نے ملک میں انتخابی مہم کے دوران کئی مباحثے کیے اور سب کے سب نے یورپ، امیگریشن، معیشت اور فرانسیسی شناخت کے حوالے سے مختلف نظریات اور تصورات پیش کیے۔
 

خیال رہے کہ فرانس میں ہونے والے اس صدارتی انتخاب میں کل 11 امیدواروں میں سے کوئی بھی امیدوار 50 فیصد سے زیادہ ووٹ نہ لے سکا تو یہ انتخاب دوسرے مرحلے میں چلا جائے گا۔
دوسرے مرحلے میں سب سے زیادہ ووٹ حاصل کرنے والے دو امیدواروں کے درمیان دوسرا مقابلہ سات مئی کا ہوگا۔

واضح رہے کہ جمعرات کو فرانس کے دارالحکومت پیرس میں حکام کے مطابق ایک مسلح حملہ آور کی فائرنگ سے پولیس کے دو اہلکار ہلاک اور دو زخمی ہو گئے تھے۔

اس حملے کے بعد ملک میں صدراتی انتخابات کے لیے سخت سکیورٹی کے انتظامات کیے گئے ہیں۔
انتخابی مہم کے دوران بھی نیشنل سکیورٹی گفتگو کا مرکزی نکتہ رہی ہے، تاہم امیدواروں پر حالیہ حملوں کو اپنے سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا الزام لگایا گیا ہے۔
صف اول کے امیدواروں کے درمیان سخت مقابلے کی توقع کی جا رہی ہے لیکن ماہرین نے امکان ظاہر کیا ہے کہ ان میں سے کسی بھی امیدوار کو 50 فیصد ووٹ ملنا مشکل ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری