جمعیت علمائے اسلام(ف) میں بڑی پھوٹ؛ تحصیل قلات کے امیر ساتھیوں سمیت مستعفی

خبر کا کوڈ: 1390804 خدمت: پاکستان
جمعیت علمائے اسلام فضلو

جمیعت علماء اسلام (ف )کے تحصیل قلات کے امیر نے ہنگامی پریس کانفرنس میں اپنے ساتھیوں سمیت اس جماعت کے بنیادی رکنیت سے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق جمیعت علماء اسلام (ف )کے تحصیل امیر عہدیدار ساتھیوں سمیت جمعیت کے بنیادی رکنیت سے مستعفی ہوگئے ،تفصیلات کے مطابق جمعیت علماء اسلام (ف)تحصیل قلات کے امیر مولانا محمد نور فاروقی ،تحصیل ڈپٹی جنرل سیکرٹری قاری محمد اعظم ،رکن ضلعی مجلس عمومی قلات قاری محمد ہاشم ،رکن مجلس عمومی ضلع قلات قاری غلام نبی لہڑی ،مولوی غلام قادر لہڑی ودیگر نے ہنگامی پریس کانفرنس میں جمعیت علما ء اسلام (ف)کے بنیادی رکنیت سے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔

انہوں نے کہا کہ جمیعت علماء اسلام قلات میں چند خاندانوں تک محدود ہوکر رہ گئی ہے، ہم نے اس جماعت کی فعالیت کیلئے شب و روز ایک کیا تھا، مگر اس کا صلہ ہمیں مایوسی کے سواء کچھ حاصل نہ ہوا، اسلام اور مذہب کا لبادہ اوڑھ کر سادہ لوح لوگوں کو مزید گمراہ نہیں کیا جاسکتا، ورکرز کی اس جماعت میں کوئی حیثیت اور اہمیت نہیں، ہر کوئی مال و دولت کی لالچ میں اندھا ہوچکا ہے، پارٹی منشور اور دستور کی پامالی عام سی بات بن چکی ہے، مفادات کی خاطر اس جماعت کو دو لخت کرنا اور پھر اپنے ذاتی مفادات کو ترجیح دیکر ایک ہونا ہم نے دیکھا ہے۔

انہوںنے کہا کہ ہماری کابینہ کو ختم کرنے میں ایک بااثر شخصیت کا ہاتھ تھا بحالی کے بعد بھی ان کا رویہ ہمارے ساتھ منافقانہ رہا ہے، دوسری جماعتوں سے اتحاد کرکے مکر جانا ان کے موجودہ قیادت کا وطیرہ بن چکا ہے۔

انہوںنے کہا ہمیں اور ہمارے آباؤ اجداد کو قرآن پاک کے نام اور خدا کا واسطہ دیکر ووٹ لینے والوں نے اپنے لئے بینک بیلنس، بلڈنگ اور سب کچھ خرید کر آنے والے اپنے نسلوں کیلئے بہت کچھ جمع کیا، مگر عام ورکرز سمیت عوام کی حالت بدستور آج بھی ویساہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے اکابرین نے بہت قربانیاں دی مگر اب ہمارا اس جماعت کے ساتھ مزید چلنا نا ممکن ہیں کیونکہ موجودہ قیادت کے رویے کی وجہ سے ہم آگے نہیں چل سکتے۔

انہوںنے کہا کہ ہم اپنی مشاورت کے بعد بہت جلد کسی اور سیاسی پارٹی میں شمولیت کا اعلان کریں گے اور اپنے عوام اور قوم کیلئے خدمات سرانجام دینگے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری