حافظ سعید کی نظر بندی میں مزید 3 ماہ کی توسیع

خبر کا کوڈ: 1395266 خدمت: پاکستان
حافظ سعید

حکومت پنجاب نے جماعت الدعوۃ کے امیر حافظ سعید کی نظر بندی کی مدت میں مزید 90 دن کی توسیع کردی ہے۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق پنجاب حکومت نے جماعۃ الدعوۃ کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید سمیت 5 رہنماؤں کی نظر بندی میں مزید 90 روز کی توسیع کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے

خیال رہے کہ 31 جنوری 2017 کو صوبائی حکومت نے حافظ سعید کو نظر بند کرنے کے احکامات جاری  کیے تھے اور لاہور کے علاقے مریدکے میں واقع جماعت کے مرکز کے باہرپولیس کی بھاری نفری کو تعینات کردیا گیا تھا۔۔

ذرائع کے مطابق جماعۃ الدعوۃ کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید سمیت 5 رہنماؤں کی 30اپریل کو نظر بندی کی مدت ختم ہونے پر پنجاب حکومت نے رہنمائی کیلیے وفاقی حکومت سے رابطہ کیا تھا اور مزید نظر بندی کے احکام پر پنجاب حکومت نے 90روز کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

حافظ سعید کو ان کی رہائشگاہ 116 ای جوہر ٹاؤن میں نظر بند رکھا گیا ہے۔

یاد رہے کہ وفاقی حکومت کی ہدایت پر صوبائی حکومت نے حافظ سعید، عبد اللہ عبید، ظفر اقبال، عبد الرحمن عابد اور کاشف نیازی کو 30 جنوری کو نظر بند کیا تھا۔

واضح رہے کہ ہندوستان نے 2008 میں ممبئی میں ہونے والے حملے کا ذمہ دار حافظ سعید کو ٹھہرا تے ہوئے پاکستان سے ان حملوں کے ذمہ داروں خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا تھا جس کی توثیق امریکا نے بھی کی تھی۔

امریکا نے حافظ سعید پر ممبئی حملوں میں میں کردار ادا کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے ان کے سر کی قیمت ایک کروڑ ڈالر مقرر کی تھی، ممبئی حملوں میں 6 امریکی شہریوں سمیت 166 افراد مارے گئے تھے۔

تاہم حافظ سعید متعدد بار 2008 میں ہونے والے ممبئی حملوں میں کسی بھی کردار کی تردید کرتے رہے ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری