اعتزاز حسن کے والد کا مالی امداد نہ ملنے پر وزیراعلیٰ کو خط

خبر کا کوڈ: 1403531 خدمت: پاکستان
اعتزاز حسن

قومی ہیرو اعتزاز حسن کے والد مجاہد علی بنگش نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے خط کے ذریعے شکوہ کیا ہے کہ عمران خان کے ماہانہ مالی امداد کے وعدے کے باوجود اس پر عمل درآمد نہیں ہوا۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق 6 جنوری 2014 کو ضلع ہنگو کے سکول میں داخل ہونے والے خودکش حملہ آور کو دبوچ کر متعدد طالب علموں کی جان بچانے والے اعتزاز حسن کے والد مجاہد علی بنگش نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے خط کے ذریعے شکوہ کیا ہے کہ عمران خان نے وعدہ کیا تھا کہ شہید اعتزاز حسن کے والدین کو صوبائی حکومت کی طرف سے ماہانہ مالی امداد دی جائے گی لیکن تاحال اس پر عمل درآمد نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق اعتزاز حسن کے والد مجاہد علی بنگش نے خط میں لکھا ہے کہ امداد نہ ملنے پر حکام کو پہلے بھی خط لکھے ہیں لیکن کوئی جواب دینے کیلئے تیار نہیں۔

اعتزاز حسن کے والد مجاہد علی بنگش نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کی جانب سے ماہانہ مالی امداد کے وعدے کو خیبر پختونخوا حکومت نے پورا نہیں کیا۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا حکومت کے ترجمان اور صوبائی مشیر اطلاعات مشتاق غنی نے رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ میں چیک کروں گا۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ میرے نوٹس میں نہیں ہے کہ پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کی جانب سے کوئی ایسا اعلان کیا گیا تھا۔

اگر کوئی وعدہ ہماری طرف سے کیا گیا تھا تو وہ پہلے ہی پورا کر دیا گیا ہو گا اور اگر پورا نہیں ہوا تو اب کر دیں گے۔

یاد رہے کہ اعتزاز حسن  نے 6 جنوری 2014 کو ضلع ہنگو کے سکول میں دہشتگردی کی نیت سے داخل ہونے والے خودکش حملہ آور کو دبوچ کر متعدد طالب علموں کی جان بچاتے ہوئے جام شہادت نوش کیا تھا۔

    تازہ ترین خبریں