افغانستان میں داعش سے مقابلہ، افغان سیکورٹی مشیر کے روس دورے کا اہم ہدف

خبر کا کوڈ: 1417609 خدمت: دنیا
اتمر

افغان قومی سلامتی کے مشیر اپنے ملک میں داعش پر لگام لگانے اور روس کی آٹھویں سلامتی کانفرنس میں شرکت کرنے کے لئے ماسکو روانہ ہو گئے ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق افغان قومی سلامتی کے مشیر حنیف اتمر اپنے روسی ہم منصب نیکولای پتروشف کی دعوت پر روس کے سلامتی اجلاس میں شرکت کرنے کے لئے ماسکو روانہ ہو گئے ہیں۔

روس کی سلامتی میٹنگ میں 25 سے زیادہ ممالک کے سیکورٹی افسران شامل ہونگے جس میں خطے کے سیکورٹی مسائل اور دہشت گردی سے مقابلے پر گفتگو ہوگی۔

روس کے دو روزہ اجلاس میں دہشت گردی سے مقابلہ کے علاوہ خطے بالخصوص افغانستان میں داعش سے مقابلے کے طریقہ کار پر گفتگو ہوگی۔

اس اجلاس میں دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے ایک جامع اور متفق علاقائی اسٹریٹجک منصوبہ آمادہ کرنے پر زور دیا جائے گا۔

سلامتی کانفرنس کے بعد حنیف اتمر روسی عہدیدرون کے علاوہ چین، ایران، ازبکستان، قزاقستان اور تاجکستان کے قومی سلامتی کے مشیروں سے بھی گفتگو کریں گے۔

ایشیائی ممالک افغانستان اور بالخصوص اس ملک کی شمالی ریاستوں میں داعش کی بڑھتی سرگرمیوں سے پریشان ہیں۔

ممکن ہے کہ افغان قومی سلامتی کے مشیر روس پر طالبان کی مبینہ حمایت کے بارے میں بھی تذکرہ کریں اور افغانستان میں بڑھتی ہوئی داعش کی سرگرمیوں سے پریشان روس اور خطے کے ممالک کے سوالوں کا جواب دیں۔

یاد رہے کہ افغانستان میں داعش اور طالبان کے درمیان جاری جھڑپوں میں امریکہ پر داعش کی حمایت کرنے کے سنگین الزامات ہیں اور مسلح باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں میں نامعلوم ہیلی کاپٹرز اترنے کی کئی خبریں شائع ہوچکی ہیں۔

    تازہ ترین خبریں