صدر پاکستان کی تنخواہ 16 لاکھ روپے ماہانہ ہونے سے متعلق خبر بے بنیاد قرار

خبر کا کوڈ: 1421758 خدمت: پاکستان
ممنون حسین

ایوان صدر کے ترجمان نے صدر ممنون حسین کی تنخواہ 16 لاکھ روپے ماہانہ ہونے سے متعلق خبر کو بے بنیاد قرار دیدیا ہے۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق ایوان صدر کے ترجمان کے مطابق وفاقی بجٹ کے حوالے سے صدر پاکستان کی تنخواہ 16 لاکھ روپے ہونے کی تردید کی گئی ہے۔

ایوان صدر کے ترجمان نے 16 لاکھ والی خبر کو بےبنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ  تنخواہ اس بجٹ میں بڑھا کر ایک لاکھ تیس ہزار روپے ماہانہ کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ خبر درست نہیں ہے کہ کہ صدر مملکت کی تنخواہ 16 لاکھ روپے ماہانہ ہو گئی۔

ترجمان ایوان صدر نے بتایا ہے کہ نئے وفاقی بجٹ سے قبل صدر مملکت کی ماہانہ تنخواہ 80 ہزار روپے ماہانہ اور سال کی مجموعی تنخواہ 9 لاکھ 60 ہزار تھی جو اس بجٹ میں بڑھ کر ایک لاکھ تیس ہزار روپے ماہانہ کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

اس طرح سال 18-2017 کے بجٹ کی منظوری کے بعد ان کی سال بھر کی مجموعی تنخواہ سولہ لاکھ روپے سالانہ ہو جائے گی۔

واضح رہے کہ ذرائع ابلاغ نے خبر دی تھی کہ صدر ممنون حسین کی ماہانہ تنخواہ 16 لاکھ روپے کر دی گئی ہے تاہم اس اطلاع کی تردید سامنے آئی ہے اور ایوان صدر سے پتہ چلا ہے کہ تنخواہ 16 لاکھ ماہانہ نہیں، بلکہ 16 لاکھ روپے سالانہ کی سفارش کی گئی ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری