مرقد امام خمینیؒ اور ایران پارلیمینٹ پر حملہ آل سعود و امریکہ کی ایران کے خلاف مشترکہ محاذ آرائی کا نتیجہ ہے: فضل حسین اصغری


مرقد امام خمینیؒ اور ایران پارلیمینٹ پر حملہ آل سعود و امریکہ کی ایران کے خلاف مشترکہ محاذ آرائی کا نتیجہ ہے: فضل حسین اصغری

اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر فضل حسین اصغری نے امام خمینی ؒکے مرقد اور ایرانی پارلمینٹ دھماکہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ ، اسلامی ممالک کو غیر مستحکم کرنے اور اپنا اسلحہ بیچنے کیلئے ان کے درمیان مسلسل دشمنی اور نفرت کے بیج بو رہاہے۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر فضل حسین اصغری نے کہا کہ یہ حملہ آل سعود و امریکہ کی ایران کے خلاف مشترکہ محاذ آرائی کا نتیجہ ہے۔

غم اور دکھ کی اس گھڑی میں ایرانی عوام کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور ولی امر مسلمین آیت اللہ خامنہ ای کی خدمت میں تعزیت پیش کرتے ہیں۔

ایران پاکستان کا ہمسایہ ملک ہے، پڑوسی مسلم ممالک سے مضبوط دوستانہ اور پائیدار تعلقات کے علاوہ ہمارے پاس کوئی اور آپشن نہیں ہونا چاہیئے۔

امریکہ یا آل سعود کی خوشنودی حاصل کرنے کی بجائے ہمیں علاقائی تقاضوں اور قومی مفادات کو مقدم رکھنا ہوگا۔

پاکستان ایک طویل عرصہ سے دہشت گردی کا شکار ہے، خطے میں امن کی کوششوں اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پاکستان کے بے مثال کردار کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا۔

ایران، افغانستان اور پاکستان کو دہشت گردی کے عفریت نے نمٹنے کے لئے پرعزم طور پر مشترکہ انداز میں آگے بڑھانے کی ضرورت ہے، امن کوششوں میں تینوں ممالک کے مابین غیر مشروط باہمی تعاون ازحد ضروری ہے۔

امت مسلمہ کو اپنی بقا کے لئے یہود و نصاری کے مقابلے میں یکجا ہونا پڑے گا۔

امریکہ سے دوستی خود سے دشمنی کے مترادف ہے۔ جو بھی ملک اسلامی ملک امریکہ کو دوست سمجھتا ہے اسے ماضی سے سبق سیکھنا ہوگا، عراق و افغانستان کی مثالیں ہمارے سامنے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کا واقعہ چاہے کسی بھی ملک میں ہو قابل مذمت ہے۔ دہشت گرد قوتیں عالمی امن کی دشمن ہیں، ان کا انجام عبرت ناک ہونا چاہیئے۔

ایران کے خلاف سعودی و امریکی اتحاد کا نقصان سوائے مسلمانوں کے اور کسی کو نہیں اٹھانا پڑے گا۔

مرکزی صدر کا مزید کہنا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران خطے میں دہشت گردی کے خلاف آہنی دیوار ہے مظلوم فلسطینی اور یمنیوں کی حمایت کے نتیجہ میں ایران پر بزدلانہ کارروائیاں کی جارہی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا امریکہ اور آل سعود کی پیداوار داعش، اسلام کی حقیقی چہرہ کو مسخ کرنے کے ساتھ ساتھ دہشت گردی کے خلاف نبردآزما طاقتوں پر بزدلانہ حملے کرنے میں مگن ہے۔ افغانستان، قطر اور ایران میں دہشتگردانہ حملے اور بدلتی ہوئی صورتحال امریکی صدر ٹرمپ کی سعودی حکومت سے میل ملاقاتوں کا ہی نتیجہ ہے۔

انسانیت، شعور اور بصیرت کے نام پر پوری دنیا خصوصا عالم اسلام سے اپیل کرتے ہیں کہ شیطان بزرگ امریکہ کے خلاف سب لوگ متحد ہوجائیں۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری