سانحہ ماڈل ٹاون کی تیسری برسی پر قرآن خوانی اور طاہر القادری کا خطاب

خبر کا کوڈ: 1440763 خدمت: پاکستان
طاہر قادری

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے شہدائے ماڈل ٹاؤن کی تیسری برسی کے موقع پر شہر اعتکاف میں قرآن خوانی کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جن حکمرانوں کے ذمے عوام کے جان و مال کی حفاظت تھی وہ قاتل اور ڈاکو بن گئے ہیں۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق سانحہ ماڈل ٹاون کی تیسری برسی پر پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے شہر اعتکاف میں قرآن خوانی کے بعد خطاب کیا۔

اپنے پرجوش خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ جن حکمرانوں کے ذمے عوام کے جان و مال کی حفاظت تھی وہ قاتل اور ڈاکو بن گئے ہیں۔

دہشتگرد گروپوں نے ہزاروں جانیں لے لیں کسی کو پرواہ نہیں کیونکہ دہشتگردوں کے سپورٹرز ایوانوں میں بیٹھے ہیں۔

شہدائے ماڈل ٹاؤن کے خون سے وفا داری ہمارے ایمان کا حصہ ہے، آخری سانس تک قصاص مانگتے رہیں گے، قاتل ٹولے کو ڈھیل ملی ہوئی ہے تاہم انکی پکڑ ضرور ہو گی۔

دوسری طرف اس سے قبل پیپلز پارٹی کے سینئر مرکزی رہنماء لطیف کھوسہ اور سینئر قانون دان احمد رضا قصوری نے شہر اعتکاف میں سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری سے ملاقات کی اور سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے عوامی تحریک کے موقف کی حمایت کی اور کہا کہ یہ ظلم ہے اس کا ازالہ ہونا چاہیے ۔

ان کے خطاب سے قبل ہونے والی قرآن خوانی کی تقریب میں پاکستان بھر سے آئے ہوئے ہزاروں معتکفین شریک ہوئے۔

اس موقع پر شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء بھی شریک تھے جبکہ فاتحہ خوانی میں ڈاکٹر حسن محی الدین، خرم نواز گنڈا پور، حماد مصطفیٰ، فیاض وڑائچ، میاں زاہد اسلام، احمد نواز انجم، رفیق نجم،  جی ایم ملک، سردار شاکر مزاری اور ساجد بھٹی سمیت بڑی تعداد میں عہدے دار اور کارکنان شریک تھے ۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری