عرب ریاستوں سے مذاکرات نہیں کریں گے؛ قطر بھی اڑ گیا

خبر کا کوڈ: 1441468 خدمت: دنیا
محمد بن عبدالرحمان آل ثانی وزیر خارجه قطر

قطر کے وزیر خارجہ نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ اقتصادی اور سفارتی تعلقات توڑنے والے عرب ممالک جب تک اپنے اقدامات واپس نہیں لیتے ہیں، اس وقت تک ان سے کوئی مذاکرات نہیں کیے جائیں گے۔

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق دوحہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے قطر کے وزیر خارجہ شیخ عبد الرحمان آل ثانی کا کہنا تھا کہ قطر محاصرے میں ہے، ان حالات میں کوئی مذاکرات نہیں ہوسکتے۔

انہوں نے قطر کے داخلی امور کے بارے میں مذاکرات کے امکان کو بھی مسترد کردیا ہے۔

عرب ممالک نے مذاکرات کے آغاز کے لیے ناکہ بندی ختم نہیں کی ہے۔

انہوں نے اپنے بیان میں واضح کیا کہ اقتصادی اور سفارتی تعلقات توڑنے والے عرب ممالک جب تک اپنے اقدامات واپس نہیں لیتے ہیں، اس وقت تک ان سے کوئی مذاکرات نہیں کیے جائیں گے نیز ان سے غیر متعلق کسی اور موضوع کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں ہوسکتے۔

قطر کو ابھی تک سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کی جانب سے کوئی مطالبہ موصول نہیں ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر بائیکاٹ کا سلسلہ جاری رہتا ہے تو قطر ضروری اشیاء کی فراہمی کے لیے ایران سمیت دوسری ریاستوں پر انحصار کرے گا۔

واضح رہے کہ ایران پہلے ہی قطر کو ضروری اشیاء سے لدے ہوئے کئی جہاز بھجوا چکا ہے۔

    تازہ ترین خبریں