شامی فوج دیر الزور سے 90 کلومیٹر کے فاصلے پر/ اسد کا حمیمیم فوجی اڈے کا دورہ + تصاویر

خبر کا کوڈ: 1448066 خدمت: دنیا
الرئیس الأسد مطار حمیمیم

شامی ذرائع نے دمشق کے مضافات میں فوج اور دہشتگرد تنظیم النصرہ فرنٹ کے درمیان شدید جھڑپ کی خبریں دیتے ہوئے کہا کہ فوج دیر الزور سے 90 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق دمشق کے مضافاتی علاقے عین ترما اور جوبر میں شامی افواج اور دہشتگرد تنظیم النصرہ فرنٹ کے درمیان شدید جھڑپ جاری ہے۔ شامی فوج نے پیش قدمی کرتے ہوئے مدرسہ المنار کے مشرق میں ترما پل کو بھی پار کرلیا ہے۔

یاد رہے کہ مشرقی دمشق میں واقع جوبر ابھی بھی دہشتگرد تنظیم کے زیر قبضہ ہے۔

فوجی ذرائع کے مطابق شامی افواج اس علاقے سے دہشتگردوں کے صفائے کے بعد اردن اور عراق کی سرحد سے ہوتے ہوئے اس آپریشن کو مکمل کرنے کا منصوبہ بنائے ہوئے ہے۔ 

دوسری طرف شامی افواج دیر الزور صوبے کی سرحدوں پر پہنچ چکی ہیں اور شہر سے 90 کلومیٹر کے فاصلہ پر ہیں۔

دیر الزور کے محاصرے کو توڑنا شامی فوج کی بڑی کامیابی مانی جا رہی ہے۔

الرقہ سے موصولہ اطلاعات کے مطابق امریکہ کی حمایت یافتہ شامی ڈیموکریٹک فرنٹ اور داعش کے درمیان شدید جھڑپیں جاری ہیں۔

امریکی جنگجو طیاروں  نے داعشی دہشتگروں کے لئے پمفلیٹ گرائے ہیں جن میں انہیں حکم دیا گیا ہے کہ وہ خود کو ترک لڑاکوں کے سامنے تسلیم کریں۔

 دوسری طرف شامی صدر بشار اسد نے شامی فوج کے اہم اڈے حمیمیم کا دورہ کیا۔

یہ فوجی اڈہ لاذقیہ میں واقع ہے جہاں روسی فوجی تعینات ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری