اسلام آباد کا انکار نہ کرنا دراصل داعش کے پاکستان میں قدم جمانے کی واضح دلیل ہے، امریکی ماہر

خبر کا کوڈ: 1454244 خدمت: پاکستان
مایکل کوگلمن

واشنگٹن میں قائم ولسن سینٹر میں جنوبی ایشیا کے معاون سربراہ اور سینیئر ایسوسی ایٹ مائیکل کوگلمن نے کہا ہے کہ پہلے کی طرح اب پاکستان داعش کی موجودگی سے انکار نہیں کررہا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق امریکی ماہر 'مائیکل کوگلمن' اور دیگر تجزیہ کاروں نے متنبہ کیا ہے کہ پاکستان میں داعش تنظیم جو ابھی نسبتاً چھوٹی سطح کی ہے، متعدد علاقوں میں تیزی سے پھیل رہی ہے، جہاں حکومت قانونی عملداری قائم کرنے کی جستجو کر رہی ہے، جن میں کشیدگی کا شکار صوبہ بلوچستان بھی شامل ہے۔

کوگلمن نے کہا کہ پاکستان میں ایسا ماحول ہے جس میں دہشت گرد گروہوں کی ہمت افزائی ہوتی ہے اور وہ پنپتے ہیں، چونکہ دیگر دہشت گرد گروپس پہلے سے موجود ہیں اس لئے ان کی تنصیبات انتہا پسندی کے لیے ایک سازگار ماحول فراہم کرتی ہیں۔

انہوں نے مزید یہ بھی کہا کہ اگر اس کو بر وقت نہ روکا گیا تو پاکستان کی صورتحال ابتر ہو جائے گی اور اس ملک کو ایک بڑی خانہ جنگی کا سامنا کرنا پڑے گا۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری