عین ترما اور جوبر میں شدید جھڑپیں/ فیلق الرحمن اور جیش الاسلام کو بھاری نقصان + تصاویر

شامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ عین ترما اور جوبر میں فوج اور دہشتگرد تنظیموں کے درمیان شدید جھڑپیں جاری ہیں جس کے نتیجے میں دہشتگردوں کی ایک کثیر تعداد ہلاک ہو گئی ہے۔

جوبر سوریه

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق دمشق کے مشرق میں واقع عین ترما اور جوبر میں دہشتگرد تنظیموں اور فوج کے درمیان شدید جھڑپیں جاری ہیں۔ شامی فضائیہ دہشتگردوں کی نقل و حرکت کو زیر نظر رکھے ہوئے ہیں اور ان پر شدید حملے جاری ہیں۔

شامی ذرائع کے مطابق شامی افواج نے اپنے ہمنواوں کی مدد سے عین ترما ور زملکا پل کے اطراف میں کارروائیوں کے دوران کئی اہم علاقوں کو دہشتگردوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا ہے۔

شامی فوج نےعین ترما کے شمال مغرب میں الحوم نامی علاقے کو بھی آزاد کرا لیا ہے۔

یاد رہے کہ یہ علاقہ دہشتگردوں کے اہم اڈوں میں شمار ہوتا ہے۔

شامی فوج نے اس علاقے میں دہشتگردوں کے ذریعے کھودی گئیں خندقیں اور سرنگوں کا سراغ لگاتے ہوئے انہیں منہدم کر دیا ہے۔

شامی فوج نے اس علاقے میں جیش الاسلام اور فیلق الرحمن کے دہشتگردوں کے خلاف شدید حملے کرتے ہوئے دسیوں دہشتگردوں کو ہلاک کر دیا ہے۔

مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ دہشتگردوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے اور وہ ایک دوسرے سے مدد کی التجا کر رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق شامی فوج ابھی عین ترما کے کسی بھی علاقے میں داخل نہیں ہوئی ہے۔

تسنیم کے رپورٹر نے دارالحکومت دمشق کے مضافات میں جاری اس فوجی آُپریشن کی اہم تصاویر حاصل کیں ہیں۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی دنیا خبریں
اہم ترین دنیا خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری