جنگ شریف خاندان کیخلاف نہیں بلکہ کرپشن کیخلاف تھی/ باری آصف زرداری کی ہے، عمران خان

خبر کا کوڈ: 1479028 خدمت: پاکستان
عمران خان

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا پریڈ گراونڈ میں یوم تشکر جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ "مجھے خوشی اس بات کی ہے کہ اپنے سامنے ایک زندہ قوم دیکھ رہا ہوں"۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق اسلام آباد کے پریڈ گراؤنڈ میں تحریک انصاف کے یوم تشکر جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ مجھے سب سے زیادہ خوشی اس بات کی ہے کہ میں اپنے سامنے ایک زندہ قوم دیکھ رہا ہوں جو پاکستان کے مسائل کو سمجھ بیٹھے ہیں، خوشی ہے کہ خواتین بھی پاکستان کو ایک عظیم قوم بنانے میں بھرپور جدوجہد کر رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پوری پاکستانی قوم کی طرف سے سپریم کورٹ کے 5 ججزکو سلام اور جے آئی ٹی کے ممبران کو سیلوٹ پیش کر تا ہوں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق عمران خان نے کہا کہ جب پاناما کیس کے فیصلے پر ہم سپریم کورٹ گئے تو پیپلز پارٹی اور ہمارے سیاسی کزن طاہر القادری نے کہا گیا کہ آپ نے عدالت جا کر بہت بڑی غلطی کی لیکن نوجوانوں یاد رکھو کہ جب انسان کسی چیز کا فیصلہ کر لیتا ہے تو وہ کر کے رہتا ہے، اللہ تعالیٰ نے ہر انسان کے اندر بے پناہ صلاحیت رکھی ہیں، آپ سب لوگ بھی عمران خان سے بڑے انسان بن سکتے ہیں لیکن صرف اپنے اندر چھپی صلاحیتوں کو ڈھونڈنے کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ آج مجھے ایک نیا پاکستان نظر آ رہا ہے، ابھی میچ ختم نہیں ہوا لیکن میں نوجوانوں کو ابھی سے خوشخبری دے رہا ہوں کہ آپ لوگ نئے پاکستان کا میچ جیت گئے ہیں۔

چیرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ نیا پاکستان میٹرو بنانے، سڑکیں بنانے سے نہیں بلکہ  قوم کو تعلیم یافتہ اور باشعور بنانے سے بنے گا، ہم نئے پاکستان میں ایسی اصلاحات لائیں گے کہ ہمیں زکوۃ دینے کے لئے غریب لوگ نہیں ملیں گے، یہاں سے ڈاکٹرز کی ٹیمیں علاج کے لئے بیرون ملک جائیں، سرکاری اسکولوں میں مفت اور سب سے اچھی تعلیم ہو اور جو بچے سرکاری اسکولوں میں تعلیم حاصل نہیں کر سکتے وہ پرائیویٹ اسکولوں میں جائیں لیکن پاکستان میں اس کا الٹ ہے۔

سربراہ تحریک انصاف نے کہا کہ ہماری جنگ شریف خاندان کے خلاف نہیں بلکہ کرپشن کے خلاف تھی، شاہد خاقان عباسی اور شہباز شریف تیار ہو جاؤ ہم آ رہے ہیں، آصف زرداری اور مولانا فضل الرحمان کے پیچھے بھی آئیں گے۔ انہوں نے کہا میڈیا کے گاڈ فادر ہمیں بلیک میل نہیں کر سکتے، شکیل الرحمان نے کہا کہ میں تو بزنس مین ہوں تو مطلب یہ کہ انہیں  تو جہاں سے بھی پیسہ ملے گا وہ اسی طرف چلے جائیں گے۔

آزاد کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ یہ کس قسم کا آدمی ہے جو کرپٹ لوگوں کے پیچھے  اس قسم کی بات کر رہا ہے، اسے شرم آنی چاہیئے تھی، راجہ فاروق حیدر نے جو بیان دیا وہ ملک سے غداری کے زمرے میں آتا ہے، کشمیری عوام سے کہتا ہوں کہ باہر نکلیں اور ان کے گھر کے باہر مظاہرے کریں۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگ کرپشن اور منی لانڈرنگ کر کے معصوم چہرے بنا تے ہیں اور قوم کو بے وقوف بنانے کی کوشش کرتے ہیں، شوکت خانم اسپتال 4 ارب روپے میں بنا جب کہ اس ملک کا ایک ہزار ارب روپے بیرون ملک جاتا ہے، ملک مقروض ہو  رہا ہے، جب آصف زرداری آیا  تو ہر پاکستانی پر 35 ہزار روپے کا قرضہ تھا اور آج ہر پاکستانی پر ایک لاکھ 25 ہزار روپے کا قرضہ ہے۔

شاہ محمود قریشی کا جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ  جے آئی ٹی اور ججز کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جنہوں نے ایک کرپٹ وزیراعظم کو گھر بھیجا۔ انہوں نے کہا کہ میری آنکھ دور دور تک نواز شریف کو جاتا اور عمران خان کو آتا دیکھ رہی ہے، مسلم لیگ (ن) اور ہم میں اتنا فرق ہے کہ انہوں نے انصاف کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کیں لیکن ہم نے احتساب کو خوش آمدید کہا، ہمارا دامن صاف ہے اور ہم احتساب میں سرخرو ہوں گے۔ خواجہ سعد رفیق کہتے ہیں کہ تحریک انصاف والو مٹھائیاں مت کھاؤ یہ تمھیں ہضم نہیں ہوں گی، بالکل ٹھیک کہا سعد رفیق نے کیونکہ ہمارا آپ لوگوں کا ہاضمہ تو اتنا اچھا ہے کہ آپ لوگ اربوں روپے بھی ہضم کر جاتے ہیں، اللہ ہمیں اس طرح کے ہاضمے عطا نہ کرے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری