واہگہ: جنوبی ایشیا کا سب سے بڑا پاکستانی پرچم لہرا دیاگیا

خبر کا کوڈ: 1490980 خدمت: پاکستان
پرچم پاکستان

چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ نے لاہور میں واہگہ بارڈر پر پاکستان کے 70 ویں جشن آزادی کے سلسلے میں جنوبی ایشیا کے سب سے بڑے اور دنیا کے آٹھویں بڑے پاکستانی پرچم کو لہرایا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق جشن آزادی پاکستان کی پروقار تقریب واہگہ بارڈر میں منعقد ہوئی جس کے مہمان خصوصی چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ تھے جبکہ دیگر مہمان بھی شریک تھے۔

ڈاون نیوز نے رپورٹ دی ہے کہ اس موقع پر پاکستان کا قومی ترانہ بھی پڑھا گیا جبکہ جنرل قمر باجوہ اور دیگر افراد نے قومی پرچم کو سلامی دی اور موجود شرکا نے پاکستان زندہ باد کے فلگ شگاف نعرے لگائے۔

واہگہ بارڈر میں لہرایا گیا پرچم پاکستان اور جنوبی ایشا کا سب سے بڑا جبکہ پوری دنیا کا آٹھواں بڑا پرچم ہے۔

پاکستانی پرچم کو 4 سو فٹ کی بلندی پر لہرایا گیا جس کی چوڑائی 120 فٹ اور اونچائی 80 فٹ ہے۔

چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر باجوہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ 'سب سے پہلے میں آپ سب کو پاکستان کی 70 سالہ جشن پر مبارک دیتا ہوں اور آپ کا جوش دیکھ کر میرے اعتماد میں بھرپور اضافہ ہوا ہے اور جس ملک کے لوگوں میں یہ جذبہ ہو اس کو کون شکست دے سکتا ہے'۔

جنرل قمر باجوہ نے کہا کہ 'آج سے 70 برس قبل لاہو کے اسی شہر میں ہی پاکستان کی قرارداد منظور ہوئی تھی جس کے 7 سال کی جدوجہد کے بعد پاکستان کو حاصل کیا اور 14 اگست کو 27 رمضان کی رات تھی جو ملک بابرکت رات کو بنا ہو اور اللہ اور رسول کے نام پر بنایا گیا اس کو کوئی شکست نہیں دے سکتا'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'جس وقت پاکستان کا قیام ہوا تو ملک معاشی، سماجی، سیاسی اور دفاعی لحاظ سے کمزور تھا کیونکہ ہندوستان نے ہمیں اپنا حق نہیں دیا تھا لیکن قلیل وسائل کے باوجود ہمارے بزرگوں نے بڑی محنت کی اورپاکستان کو اپنے پیروں پر کھڑا کیا اور آج پاکستان ایک مضبوط ملک ہے جو دن بہ دن ترقی کرتا جارہا ہے'۔

جنرل قمر باجوہ نے کہا کہ 'اس سفر کے دوران ہم سے کچھ غلطیاں بھی ہوئیں جن سے ہم نے سیکھا اور آج پاکستان اپنے اصل راستے پر گامزن ہوچکا ہے جو آئین و قانون کا راستہ ہے، آج پاکستان کا ہر ادارہ نہایت ایمانداری اور تندہی سے کام کرہا ہے اور وہ دن دور نہیں جب ہم علامہ اقبال اور قائد اعظم کا پاکستان بنا کر دم لیں گے'۔

انھوں نے کہا کہ 'اس سفر میں ہم نے بہت سی قربانیاں دی ہیں چاہے وہ 48، 65، 71 کارگل کا معرکہ ہو یا دہشت گردی کے خلاف جنگ یا آپریشن راہ راست ہو یا ردالفساد ہم نے بہت قربانیاں دی ہیں اور میں ٓسمجھتا ہوں کہ آج یہان جو چراغ جل رہے ہیں ان میں ہمارے شہیدوں کا خون شامل ہے'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'کوئٹہ کے شہید ہوں، ایل او سی کے شہید ہوں یا دیر کے شہید ہوں وہ آج ہمارے ساتھ موجود ہیں اور ہم اپنے شہیدوں کو کبھی نہیں بھول سکتے اور ہم پر شہیدوں کے خون کا قرض ہے، ہم ایسی فوج سے تعلق رکھتے ہیں جس نے سیاچن میں گلیشر کھود کر اپنے شہیدوں کے جسد خاکی نکال لیے اگر ہم وہ کام کرسکتے ہیں تو میرا یقین کرلیں کہ ہم دہشت گردوں کو چن چن کرماریں گے اور ان کو انجام تک پہنچا دیں گے'۔

آرمی چیف نے کہا کہ 'پاکستان کے دشمن جو مشرق میں ہیں یا مغرب میں ہیں وہ یہ میری بات جان لیں کہ ان کی گولیاں اور بارود ختم ہوں گے لیکن ہمارے جوانوں کی چھاتیاں ختم نہیں ہوں گی'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'اس وقت بھی پاکستان کو بیرونی اور اندرونی طور پر بے تحاشا چیلنجز کا سامنا ہے لیکن میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم آپ کو کبھی مایوس نہیں کریں گے'۔

انھوں نے کہا کہ 'کوئی ایسی طاقت جو پاکستان کی طرف غلط نظر سے آنکھ اٹھا کر دیکھے گی یا پاکستان کو اندرونی یا بیرونی طور پر نقصان پہنچانے کی کوشش کرے گی تو پاک فوج اور تمام ادارے اس کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بن کر کھڑے ہو جائیں گے اور ان کے تمام عزائم کو خاک میں ملائیں گے'۔

پاک فوج کے سربراہ نے کہا کہ 'یہ جھنڈا جس کو ہم نے آج بلند کیا ہے یہ ہماری ترقی اور بلندی کی علامت ہے اور جس طرح 400 کی فٹ پر یہ پرچم گیااور پاکستان بھی اسی طرح اور اسی رفتار سے ترقی کرے گا'۔

انھوں نے پروقار تقریب پرڈی جی رینجرز اور ان کی ٹیم کو مبارک باد دی۔

ملک بھر میں جشن آزادی

رات کے بارہ بجتے ہی ملک بھر میں جشن آزادی کا آغاز ہوگیا اور مختلف شہروں میں تقاریب منعقد ہورہی ہیں اور پرچم کشائی کی جارہی ہے۔

لاہور میں مینار پاکستان میں آتش بازی کا خوبصور مظاہرہ کیا گیا جبکہ ملک میں جگہ جگہ آتش بازی کی گئی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اسلام آباد میں پارلیمنٹ میں ہونے والی تقریب بارش کے باعث اسلام آباد کے کنونش سینٹر میں ہوگی۔

مزید پڑھیں:جشن یوم آزادی: سعودی، ترک فضائی ٹیمیں پاک فضائیہ کا حصہ

پاکستان کے 71 ویں یوم آزادی کے سلسلے میں پاک فضائیہ کے ساتھ ساتھ ترکی اور سعودی عرب کی فضائیہ بھی جشن میں شریک ہو گی۔

ترک فضائیہ کی مشہور فضائی ٹیم 'سولوترک' اور رائل سعودی ائرفورس کی عالمی طور پر مشہور ٹیم 'سعودی ہاکز' پاکستان کی جشن آزادی خوشیوں میں پاک فضائیہ کےساتھ مل کر فضا میں رنگ بکھیریں گی۔

ترک اور سعودی ٹیموں نے میڈیا سے گفتگو کے دوران پاکستان کے یوم آزادی کے موقع پر جشن میں شریک ہونے پر مسرت کا اظہار کیا۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری