شمالی افغانستان میں طالبان کی پیشقدمی جاری، 4اہم پوسٹوں پرقبضہ

خبر کا کوڈ: 1498297 خدمت: دنیا
ارتش افغانستان 4

شمالی افغانستان کے صوبے فاریاب میں سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ افغان فورسز کے اہلکاروں نے بغیر کسی مزاحمت کے 4 اہم پوسٹوں کو طالبان کے حوالے کردیا ہے۔

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، شمالی افغانستان کے صوبے فاریاب میں سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ افغان فورسز کے اہلکاروں نے بغیر کسی مزاحمت کے عقب نشینی کی جس کی وجہ سے غورماچ نامی شہرکے  4 اہم پوسٹوں پرطالبان نے قبضہ کرلیا ہے۔

صوبے فاریاب کے گورنر کے ترجمان احمدجاوید بیدارکا کہنا ہے کہ جن چک پوسٹوں کوخالی کیاگیا ہے وہ خاص اہمیت کے حامل نہیں تھے۔

جاوید بیدار کا کہنا ہے کہ غورماچ کے قریب طالبان کے خلاف نئی چک پوسٹیں بنائی جارہی ہیں۔

دوسری طرف طالبان کا دعویٰ ہے کہ افغان سیکیورٹی فورسز نے پسپائی اختیار کرتے ہوئے 6 اہم پوسٹوں سے دستبردارہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ غورماچ نامی علاقے میں 20 دنوں سے افغان سیکیورٹی فورسز کے 400 سے زائد اہلکار طالبان کے محاصرے میں ہیں، افغان حکومت نے ابھی تک ان اہلکاروں کی حفاظت کے لئے کسی قسم کی امداد رسانی نہیں کی ہے۔

غورماچ میں محصور اہلکاروں کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے فوری طور پر ان کی مدد نہ کی توعلاقہ طالبان کے حوالہ کرکے عقب نشینی کریں گے۔

افغان سیکیورٹی فورسز کا کہنا ہے کہ ہم غورماچ کے علاقے میمنہ میں 4 مہینوں سے طالبان کے محاصرے میں ہیں حکومت کی طرف سے اب تک کوئی مدد نہیں کی گئی ہے۔

 

 

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری