لبنانی فوج نے داعش کے زیر قبضہ علاقوں کا 80 فیصد حصہ واپس لے لیا ہے۔

خبر کا کوڈ: 1499873 خدمت: اسلامی بیداری
ارتش لبنان

لبنانی فوج نے مجموعی طور پر ایک سو مربع کلو میٹر کے رقبے کو واپس لے لیا ہے جبکہ داعش کو صرف بیس مربع کلو میٹر کے رقبے میں محصور کردیا گیا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق لبنانی فوج کے ترجمان علی کانسو  نے وزارت دفاع میں پریس کانفرس کا اہتمام کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کے مشرق میں واقع راس بعلبک، الا فقیحہ اور الا قارا  قصبے کے پہاڑی علاقوں میں داعش دہشت گرد تنظیم کے خلاف شروع کردہ  فوجی آپریشن کے چوتھے روز  داعش کے زیر قبضہ علاقوں کے 80 فیصد کو  واپس  لے لیا گیا ہے۔

کانسو نے کہا کہ  فوج نے مجموعی طور پر ایک سو مربع کلو میٹر کے رقبے کو واپس لے لیا  ہے اور داعش بیس مربع کلو میٹر کے رقبے میں محصور کردی گئی ہے۔

لبنانی فوج نے بعد میں  سماجی رابطوں کی ویب سائٹ کے ذریعے اعلان کیا ہے کہ نجات دہندہ علاقوں میں بارودی سرنگوں کا سراغ لگانے کی کاروائیاں جاری ہیں۔

واضح رہے کہ آج صبح لبنان کے علاقے عرسال کے جوار میں نصب بم کو تباہ کرنے کے دوران دھماکہ ہونے سے ایک لبنانی فوجی شہید جبکہ 4 زخمی ہو گئے تھے جبکہ  چار دنوں سے جاری آپریشن میں 4 لبنانی فوجی ہلاک اور 14 زخمی ہوئے ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری