قطر ایران تعلقات کی بحالی پر امریکہ اور امارات کا ردعمل

خبر کا کوڈ: 1501326 خدمت: دنیا
هیثر ناورت، سخنگوی وزارت خارجه آمریکا

امریکی اور اماراتی حکام قطر حکومت کی جانب سے ایران کیساتھ تعلقات بحال کرنے کے فیصلے پر سیخ پا ہوگئے ہیں۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق امریکی اور اماراتی وزارت خارجہ نے قطر اور ایران کے درمیان تعلقات کی بحالی پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اماراتی وزیر خارجہ انور قرقاش نے اپنے ٹوئیٹر اکاونٹ پر لکھا ہے کہ دوحہ نے ایران کیساتھ تعلقات بحال کرکے اپنی سفارتی مشکلات میں اضافہ کردیا ہے۔

قرقاش نے ایک ٹوئیٹ میں لکھا کہ دوحہ نے یمن یا ایران کے حوالے سے فیصلوں کا اعلان کرکے اپنی مشکلات میں اضافہ کردیا ہے۔

اسی طرح امریکی وزارت کارجہ کے ایک عہدیدار نے وال اسٹریٹ جرنل کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ قطر نے واشنگٹن سے کہا ہے کہ یہ فیصلہ صرف اور صرف سعودی عرب سے ناراضگی کو ظاہر کرنے کیلئے کیا گیا ہے جبکہ دوحہ تہران کیساتھ روابط بڑھانے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتا۔

اس کے علاوہ امریکی ترجمان دفترخارجہ 'ہیدر ناؤٹ' نے گزشتہ روز پریس کانفرنس کے دوران کہا: "کشیدگی طول پکڑ گئی ہے۔ ہمیں حالیہ صورتحال پر خدشات ہیں۔ آپ کے قطر کی جانب سے ایران کیساتھ تعلقات کی بحالی پر مبنی سوال کے بارے میں صرف اتنا کہنا چاہوں گی کہ فریقین کو لفظی جنگ کے خاتمے کیلئے دعوت دی جائے"۔

انہوں نے مزید کہا: "ہم جانتے ہیں کہ آپ اس موضوع کے بارے میں تفصیلات جاننا چاہتے ہیں تاہم قطر اور ایران ہی آپ کے سوال کا بہتر جواب دے سکتے ہیں"۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری