روہنگیا مسلمانوں کیلئے تہران اور انقرہ کے سوا کسی نے کچھ نہیں کیا، علامہ ریاض شاہ

خبر کا کوڈ: 1517398 خدمت: اسلامی بیداری
علامہ ریاض شاہ

جماعت اہلسنت پاکستان کے مرکزی ناظم اعلی نے اس بیان کیساتھ کہ روہنگیا مسلمانوں کیلئے او آئی سی مطالبے نہیں اقدامات اٹھائے، کہا: "ترکی اور ایران کے سوا کسی اسلامی ملک نے روہنگیا مسلمانوں کیلئے کچھ نہیں کیا۔"

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق جماعت اہلسنت پاکستان کے مرکزی ناظم اعلی علامہ پیر ریاض حسین شاہ نے کہا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی پر او آئی سی کا بیان کافی نہیں، او آئی سی مطالبے نہیں اقدامات اٹھائے، ترکی اور ایران کے سوا کسی اسلامی ملک نے روہنگیا مسلمانوں کیلئے کچھ نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ مظلوم اور مجبور روہنگیا مسلمانوں کے دفاع کیلئے سخت اقدامات کی ضرورت ہے، اسلامی ممالک برما کا سفارتی و تجارتی بائیکاٹ کرکے روہنگیا مسلمانوں کی شہریت کا مسئلہ حل کروا سکتے ہیں۔

علامہ ریاض شاہ نے مزید کہا کہ برما کی ظالم فوج روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام کرکے وحشیانہ پن کا بدترین مظاہرہ کر رہی ہے، میانمار کے مسلمانوں کی برما سے بے دخلی کی بنیادی وجہ مذہبی تعصب ہے، عالمی برادری اور انسانی حقوق کے عالمی اداروں کو برما میں بدھ مت کے پیروکاروں کی دہشتگردی اور انتہا پسندی کیوں نظر نہیں آتی، امت مسلمہ جرم ضعیفی کی سزا بھگت رہی ہے، مسلمانوں کے تمام مسائل کا حل اتحاد امت میں پوشیدہ ہے۔

انہوں نے کہاکہ امت کے اتحاد میں بعض اسلامی ممالک کے مفادات رکاوٹ ہیں، روہنگیا مسلمانوں کے حق میں تمام اسلامی ممالک متحد ہوکر سفارتی مہم چلائیں، عالم کفر کا متحد اور عالم اسلام کا منتشر ہونا المیہ ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری