نیب ریفرنس: احتساب عدالت میں نوازشریف 19 ستمبر کو طلب

سپریم کورٹ کے پاناما پیپرز کیس کے فیصلے میں دی گئی ہدایات کی روشنی میں قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے دائر ریفرنس کے حوالے سے احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو 19 ستمبر کو طلب کرلیا۔

نیب ریفرنس: احتساب عدالت میں نوازشریف 19 ستمبر کو طلب

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق راولپنڈی کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے سابق وزیراعظم کو فلیگ شپ ریفرنس، جو بیرون ملک قائم کی گئیں 16 کمپنیوں سے متعلق ریفرنس ہے، میں سمن جاری کیے۔

احتساب عدالت نے نوٹس جاری کرتے ہوئے نواز شریف کو 19 ستمبر کو طلب کرلیا۔

خیال رہے کہ اس ریفرنس کے مطابق سابق وزیراعظم کے بچے حسن نواز، حسین نواز اور مریم صفدر بھی مذکورہ کمپنیوں میں اسٹیک ہولڈر ہیں۔

گذشتہ روز رجسٹرار احتساب عدالت نے پاناما گیٹ تحقیقات کے حوالے سے شریف خاندان کے خلاف دائر ہونے والے 4 ریفرنسز میں سے 3 نیب ریفرنسز واپس کردیئے تھے۔

احتساب عدالت نے نواز شریف اور ان کے بیٹوں حسن اور حسین نواز کے خلاف آف شور کمپنیوں کی ملکیت کے حوالے سے دائر کیا گیا صرف ایک ریفرنس منظور کیا تھا۔

قومی احتساب بیورو (نیب) کو واپس کیے گئے ریفرنسز میں لندن کی ایون فیلڈ جائدادوں، جدہ کی عزیزیہ اسٹیل ملز اور موجودہ وزیر خزانہ اسحٰق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کے حوالے سے دائر کیے گئے ریفرنسز شامل تھے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے (8 ستمبر) نیب نے احتساب عدالت میں 4 عبوری ریفرنسز جمع کرائے تھے، تاہم یہ ایک غیر معمولی بات ہے کہ ٹرائل کے لیے احتساب عدالت میں جمع کرائے گئے ریفرنسز کو تصحیح کے لیے نیب کو لوٹا دیا گیا تھا۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری