حماس کی جانب سے اسرائیل کا نام بلیک لیسٹ میں شامل کرنے پر اقوام متحدہ کی تعریف

خبر کا کوڈ: 1529088 خدمت: اسلامی بیداری
بلیک لسٹ

فلسطین کی مزاحمتی تحریک حماس کے مطابق صیہونی حکومت کا نام بلیک لسٹ میں شامل کرنا غاصب صیہونی حکومت کی حقیقی ماہیت اور چہرے کو بے نقاب اور فلسطینی عوام کی مظلومیت کی نشاندہی کرتا ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے صیہونی حکومت کا نام انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرنے والی حکومتوں کی بلیک لیسٹ میں شامل کرنے پر اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی تعریف کی ہے۔

فلسطین کے انفارمیشن سینٹر کے مطابق حماس کے ترجمان فوزی برہوم نے ایک بیان میں انسانی حقوق کونسل کے اقدام کو اہم قرار دیا اور کہا کہ اس بلیک لیسٹ میں صیہونی حکومت کا نام شامل کرنا غاصب صیہونی حکومت کی حقیقی ماہیت اور چہرے کو بے نقاب اور فلسطینی عوام کی مظلومیت کی نشاندہی کرتا ہے۔

حماس کے ترجمان کے بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی اداروں کو چاہئے کہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے اس اقدام کی پیروی کر کے صیہونی حکومت کے عہدیداروں پر مقدمہ چلانے انہیں ‎سزا دینے اور ساتھ ہی فلسطینی عوام کی حمایت کی کوشش کریں۔

اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی لیسٹ میں ایسی انتیس حکومتیں ہیں جو ہمیشہ انسانی حقوق کے کارکنوں کے خلاف نسل پرستانہ اقدامات انجام دیتی ہیں۔

اس درمیان خبروں میں کہا گیا ہے کہ صیہونی حکومت نے گذشتہ آٹھ برس کے دوران مقبوضہ فلسطین میں کم سے کم ترپن مساجد اور کلیساؤں کو مسمار کیا ہے۔

فلسطین کے انفارمیشن سینٹر نے خبردی ہے کہ صیہونی حکومت نے دوہزار نو سے اب تک مقبوضہ سرزمینوں میں مسلمانوں اور عیسائیوں کے مقدس مقامات پر حملے تیز کردئے ہیں۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری