سعودی حکام حج کے ایام میں ایرانیوں کو محدود کرنے کے خواہاں تھے

رواں سال حج امور کے عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے رہبرمعظم انقلاب آیت اللہ امام خامنہ ای نے کہا کہ سعودی حکام حج کے ایام میں ایرانیوں کے روابط اور ان کی صلاحیتوں کو محدود کرنا چاہتے ہیں۔

سعودی حکام حج کے ایام میں ایرانیوں کو محدود کرنے کے خواہاں تھے

خبر رساں ادارے تسنیم نے رہبر معظم کے دفتر اطلاعات و نشریات کے حوالے سے بتایا ہے کہ حج امور کے متعلقہ حکام اور کارکنوں نے رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ سید علی خامنہ ای سے ملاقات کا شرف حاصل کیا۔

وزارت حج و زیارت کے حکام سے خطاب کرتے ہوئے رہبرمعظم کا کہنا تھا کہ سعودی حکام ایران کو حج کے ایام میں دیگر ممالک کے حجاج سے دور رکھ کر محدود کرنا چاہتےہیں۔

رہبر معظم نے حج و زیارت کے حکام کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ رواں سال تمام حجاج کرام تندرستی اور سلامتی کے ساتھ وطن واپس آئے جو کہ نہایت مسرت اور خوشی کی بات ہے۔

رہبرمعظم نے حج و زیارت کے مسئولین سے کہا کہ سعودی حکام حج کے ایام میں ایرانیوں کو دیگر ممالک کے حجاج سے دور یا انہیں محدود کرنے کی کوشش کررہے تھے، حج کے ایام میں دعائے کمیل، برائت کے مراسم، اور تبلیغی پروگرام وغیرہ پر پابندی عائد کرکے ایرانیوں کو محددو کرنے کی کوشش کی گئی جس کا مقابلہ کرکے صحیح معنوں میں ایران کی آواز کو مسلم دنیا تک پہنچانا چاہئے۔

رہبر معظم نے کہا کہ آج کی دنیا میں لاتعداد انسان اسلامی جمہوری ایران کی آواز سننے میں دلچسپی رکھتے ہیں لہذا دنیا کے اہم مسائل خاص کر استعمار، مغربی غلط پالیسیوں اور دشمنان اسلام سے برائت کا اظہار نہایت اچھے انداز میں کرنا چاہئے۔

رہبرمعظم نے مزید کہا: "حج کے ایام میں سعودی حکام نے ٹی وی سکرین پر حاضر ہوکر ایران کے خلاف زبان دارزی کی، اس قسم کی زبان دارزیاں ہوتی رہتی ہیں، یہ ایک فطرتی عمل ہے لیکن اس قسم کے ابہامات اور اتہامات کا بہترین طریقے سے جواب دینے کی ضرورت ہے۔

محکمہ حج و زیارت کے سربراہ قاضی عسکر نے رواں سال حج کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے حجاج کی سلامتی اور عزت کے لئے دن رات ایک کرکے کوشش کی اور الحمدللہ تمام حجاج کرام صحیح و سلامتی کے ساتھ وطن واپس لوٹ آئے۔

 

سب سے زیادہ دیکھی گئی ایران خبریں
اہم ترین ایران خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری