افغانستان کے صوبے قندھار میں فوجی کیمپ پر حملہ، 41 اہلکار جاں بحق

خبر کا کوڈ: 1550290 خدمت: دنیا
افغانستان

افغانستان کے صوبے قندھار میں افغان نیشنل آرمی کے ایک بیس کیمپ پر خود کش حملے کے نتیجے میں 41 اہلکار ہلاک جبکہ 24 زخمی ہوگئے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق 2 مبینہ خود کش بمباروں نے رات کے وقت قندھار کے ضلع مائے وند میں آرمی کے بیس کیمپ پر حملہ کیا جن میں سے ایک حملہ آور نے خود کو گاڑی سمیت اڑا لیا جبکہ دوسرے نے واقعے کے بعد جائے وقوع پر موجود سیکیورٹی فورسز کے اہلکاروں پر فائرنگ شروع کردی۔

قندھار میں موجود افغان نیشنل آرمی کے اس بیس کیمپ میں 60 سے زائد اہلکار تعینات تھے۔

افغان صوبے قندھار کے پولیس چیف جنرل عبدالرزاق نے اس بم دھماکے کی تصدیق کر دی تاہم انہوں نے مزید معلومات فراہم کرنے سے انکار کردیا۔

امریکی خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کے مطابق اس واقعے کی ذمہ داری افغان طالبان نے قبول کرلی۔

یاد رہے کہ گزشتہ تین روز کے دوران یہ افغان سیکیورٹی فورسز پر دوسرا بڑا حملہ ہے، اس سے قبل 17 اکتوبر کو افغانستان کے جنوب مشرقی صوبے پکتیا میں قائم پولیس ٹریننگ سینٹر پر بھی اسی طرز کا خودکش حملہ کیا گیا جس میں 32 افراد ہلاک اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

پکتیا کے دارالحکومت گردیز میں ہونے والے خود کش بم دھماکے میں صوبائی پولیس چیف طوریالانی عبدیانی بھی ہلاک ہوگئے تھے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری