مشاھد حسین سید:

امریکہ چین اور پاکستان سے مقابلہ کرنے افغانستان آیا ہے/ شام، یمن اور عراق بحران کا فائدہ اسرائیل کو ہورہا ہے

خبر کا کوڈ: 1581512 خدمت: ایران
مشاهد حسین سید

استنبول میں ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی اور پاکستان سینٹ کی قائمہ کمیٹی دفاع کے چیئرمین مشاہد حسین سید کے درمیان اہم ملاقات ہوئی ہے۔

تسنیم خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پاکستان سینٹ کی قائمہ کمیٹی دفاع کے چیئرمین مشاہد حسین سید نے اسلامی جمہوری ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی سے خطے کی تازہ ترین صورتحال سمیت شام اور عراق پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

مشاہد حسین سید نے ملاقات کے دوران کہا کہ خطے میں سیاسی عدم استحکام خاص کر شام، یمن، عراق اور لبنان میں سیاسی بحران کی وجہ سے اسرائیل غلط فائدہ اٹھا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خطے میں سیاسی بحران کا فائدہ صرف اسرائیل کو ہو رہا ہے۔

مشاھد حسین سید کا کہنا تھا کہ امریکہ افغانستان میں داعشی دہشت گردوں کے خلاف لڑنے کے لئے نہیں آیا بلکہ ان کا مقصد چین اور پاکستان کے ساتھ مقابلہ کرنا ہے۔

مشاہد نے کہا کہ خطے خاص کر افغانستان میں امریکی پالیسی ناکام ہوچکی ہے وہ افغانستان سمیت کسی بھی ملک پر کنٹرول نہیں کرسکتا۔

علی لاریجانی نے کہا کہ خطے کے سیاسی بحران کو بات چیت کے ذریعے حل کیا جاسکتا ہے۔

واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل پاک فوج کے سپہ سالار نے اسلامی جمہوریہ ایران کا تین روزہ دورہ کرکے اہم امور پر ایرانی حکام سے تبادلہ خیال کیا تھا۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری