دپیکا ایرانی ہدایت کار کی فلم سے باہر کیوں ہوئیں؟

خبر کا کوڈ: 1581541 خدمت: ایران
دپیکا و مجید مجیدی

ایرانی فلم ساز مجید مجیدی ہندوستان میں اپنی فلم "بیونڈ دی کلاوڈز" کی شوٹنگ کررہے ہیں، اس فلم کے ساتھ کبھی بولی وڈ اداکارہ دپیکا پڈوکون کا نام بھی جوڑا گیا تھا، تاہم بعدازاں انہوں نے دپیکا کو اپنی فلم میں کاسٹ نہیں کیا۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق مجید مجیدی پہلے بھی کئی مرتبہ اپنی فلم میں دپیکا کو کاسٹ نہ کرنے کی وجہ بتاچکے ہیں، اور انہوں نے ایک بار پھر اس حوالے سے کیے سوالات کے جواب دیے۔

ڈان نیوز کے مطابق اس فلم کے لیے دپیکا پڈوکون نے اوڈیشن تک دیا، جس کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل بھی ہوئیں تھیں، تاہم ہدایت کار نے دپیکا کی جگہ ملاویکا موہنن نامی اداکارہ کا انتخاب کرکے پوری بولی وڈ انڈسٹری کو حیران کردیا۔

مجید مجیدی نے اس حوالے سے ہندوستان میں جاری ایونٹ 48ویں انٹرنیشنل فلم فیسٹیول انڈیا (آئی ایف ایف آئی) میں بات کی۔

ہدایت کار کا کہنا تھا کہ ’میں نئے اداکاروں کے ساتھ کام کرنا پسند کرتا ہوں، مجھے عام لوگوں میں اداکار منتخب کرنا پسند ہے‘۔

دپیکا کو فلم میں کاسٹ نہ کرنے کے حوالے سے انہوں نے بتایا کہ ’اس کا یہ مطلب بالکل نہیں کے میں پروفیشنل اداکاروں کے ساتھ کام نہیں کرنا چاہتا، لیکن جب ہم دپیکا پڈوکون کے ساتھ ممبئی میں ٹیسٹ لُک کررہے تھے تو لوگوں کے ہجوم کو سنبھالنا کافی مشکل ہوگیا تھا، جو وہاں دپیکا کی وجہ سے جمع ہوئے‘۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ فلم 'بیونڈ دی کلاوڈز' میں بولی وڈ اداکار شاہد کپور کے سوتیلے بھائی ایشان کھٹر ڈیبیو کرتے نظر آئیں گے، فلم کا میوزک اے آر رحمٰن دیں گے۔

مجید مجیدی نے مزید کہا کہ ’ہندوستان میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں، تاہم نوجوان فلم ساز کو اپنے کام کو دکھانے کا موقع نہیں ملتا‘۔

فلم کی شوٹنگ ہندوستان کے مختلف شہروں ممبئی، دہلی اور راجھستان میں کی جارہی ہے۔

’بیونڈ دی کلاوڈز' رشتوں پر مبنی ایک جذباتی کہانی ہے جو اگلے سال فروری میں ریلیز کی جائے گی۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری