اپنا ملک دیوالیہ، دوسروں کا بیڑہ پار/ وزیراعظم پاکستان کی سعودی بادشاہ سے ملاقات

خبر کا کوڈ: 1585986 خدمت: پاکستان
خاقان سعودیہ

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ایسی حالت میں سعودی عرب کا دورہ کیا ہے کہ ان کا اپنا ملک نہایت تشویشناک صورتحال سے دوچار ہے۔

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے سعودی عرب کے بادشاہ سلمان بن عبدالعزیز کو خطے میں امن واستحکام کے لیے پاکستان کے مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔

پاکستان کے  وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے سعودی فرمانروا ملک سلمان سے ریاض کے شاہی محل میں ملاقات کی۔

اس موقع پر وزیر دفاع خواجہ آصف، پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ اور انٹر سروسز انٹیلی جنس "آئی ایس آئی" کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار بھی موجود تھے۔

ملاقات کے دوران دونوں برادر ملکوں کے درمیان باہمی دلچسپی کے امور اور علاقائی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر سعودی شاہ نے ملک سے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خاتمے کے لیے پاکستان کی کوششوں کا خیر مقدم کیا جب کہ ولی عہد محمد بن سلمان نے کہا کہ سعودی عرب اور اتحاد میں شامل دیگر ممالک پاکستان کے تجربات سے فائدہ اٹھانے چاہتے ہیں۔

وزیر اعظم نے سعودی اتحاد کی صورت میں اسلامی ممالک کے مشترکہ پلیٹ فارم کے لیے سعودی ولی عہد کی کوششوں اور لگن کی تعریف کی اور خطے میں امن واستحکام کے لیے پاکستان کے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، وزیر دفاع خواجہ آصف، آرمی چیف جنرل قمر باجوہ اور آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار ریاض پہنچے تھے جبکہ دو روز قبل ریاض ہی میں نام نہاد سعودی اتحاد میں شامل ممالک کے وزرائے دفاع کا افتتاحی اجلاس بھی منعقد ہوچکا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کے اعلیٰ سیاسی و عسکری حکام نے ایسے موقع پر سعودی عرب کا دورہ کیا ہے کہ ان کا ملک نہایت تشویشناک صورتحال اختیار کرچکا ہے۔

    تازہ ترین خبریں
    خبرنگار افتخاری