بھارتی فورسز کی گولیوں نے 2 ماہ کی بچی سے ماں کی گود چھین لی + تصاویر

میسرہ بانو بھارتی فورسز کی بربریت کی وجہ سے 2 ماہ کی بچی کو چھوڑ کر ہمیشہ کیلئے چلی گئی جس سے علاقے میں صفِ ماتم بچھ گیا اور علاقہ مکینوں نے اپنی پرنم آنکھو ں سے انہیں سپرد خاک کردیا۔

بھارتی فورسز کی گولیوں نے 2 ماہ کی بچی سے ماں کی گود چھین لی + تصاویر

خبر رساں ادارے تسنیم کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق دو ماہ کی بچی سے ماں چھینی گئی، ننھی آنکھوں میں موتی جیسے آنسو ہیں، آنسو بھی شاید سوچ رہیے ہیں کہ اگر گر گئے تو اس ننھی پری کا کیا ہوگا؟ بچی دودھ پینے کے لئے ماں کو تلاش کر رہی ہے لیکن اس ننھی سی پری کو کون سمجھائے کہ اس کی ماں کو اس سے ہمیشہ کے لئے جدا کردیا گیا۔

 25 سالہ میسرہ کی شادی اپنے ہی گاﺅں کے ایک لڑکے اشفاق احمد سے ہوئی، زندگی کا گذارا جیسے تیسے چل رہا تھا لیکن اس اثنا بھارتی فوسز کی گولیوں نے اسے ہمیشہ کے لئے ابدی نیند سلا دیا۔

لواحقین کا کہنا ہے کہ اپنی لخت جگر کے جاں بحق ہونے کے بعد والد اپنے ہوش و حواس کھو بیٹھا ہے، اب وہ سکتے میں ہے، اس کو یقین ہی نہیں آرہا کہ اس کی بیٹی اسے جدا ہوگئی ہے کیونکہ میسرہ اس کی اکلوتی بیٹی تھی جس کو دیکھ کر وہ اپنی زندگی کے دن گزار رہا تھا۔

میسرہ جس نے زندگی کی 25 بہاریں دیکھی تھیں، نے دو مہینے قبل ایک ننھی سی بچی کو جنم دیا تھا۔ میسرہ بانو کے جاں بحق ہونے کے بعد علاقہ ماتم کدے میں تبدیل ہو گیا ہے اور دو ماہ کی ننھی سے بچی کو دیکھ کر ہر آنکھ پرنم ہے اور ہر دل ملول و مضطرب ہے جبکہ پورے علاقے میں سناٹا سا چھایا ہواہے۔

میسرہ کے والد محمد شعبان اور اس کے شوہر اشفاق احمد نے جس وقت جنازے کو کندھا دیا تو اس دوران یونسو میں رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے، علاقے کا ہر فرد میسرہ کی بچی کو دیکھ کر اشک بار آنسو سے واپس آرہا تھا کیونکہ اس دو ماہ کی بچی کا معصوم اور خاموش سوال یہی ہوتا ہے کہ اسے اپنی ماں کے پاس جانا ہے، دودھ پینے کے لئے تڑپ رہی ہے۔

میسرہ بھارتی فوج کے ایک نام نہاد آپریشن میں گزشتہ روز فائرنگ سے شہید ہوئی۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری