شیخ عیسی قاسم کی جان خطرے میں ہے، بحرینی نوجوان اتحاد

بحرین کی 14 فروری نامی تحریک کے نوجوانوں نے اپنے رہبر اعلیٰ شیخ عیس قاسم کی مسلسل نظر بندی کی پرزور مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ ان کی زندگی خطرے میں ہے۔

شیخ عیسی قاسم کی جان خطرے میں ہے، بحرینی نوجوان اتحاد

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق بحرینی نوجوان گروہوں کے اتحاد کے بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ ہفتے ایک اہم سرجری سے گزرنے کے بعد اب بھی حکومت شیعہ رہنما شیخ عیسی قاسم کو مناسب علاج معالجہ کی سہولیات سے دانستہ طور پر محروم رکھے ہوئے ہیں۔

آل خلیفہ حکام نے آپریشن کے فورا بعد شیخ عیسیٰ قاسم کو ہسپتال سے واپس ان کے الدارز شہر میں واقع گھر منتقل کر کے نظر بند کر دیا ہے۔ حالانکہ انہیں اسپتال میں رکھ کر بہتر طبی نگہداشت میسر آ سکتی تھی۔

یاد رہے کہ 80سالہ آیت اللہ شیخ عیسیٰ قاسم کی محض دو ماہ کے قلیل عرصہ میں یہ دوسری سرجری تھی۔

نوجوانوں کے اتحاد نے اپنے بیان میں شیخ عیسیٰ قاسم کی صحت کے مسائل اور ان کی زندگی کو درپیش خطرات کیلئے بحرینی حکومت کو مکمل طور پر ذمہ دار قرار دیا اور کہا ہے کہ حکومت یہ مت بھولے کی شیخ عیسیٰ قاسم کی زندگی کو درپیش کسی بھی خطرے کی صورت میں اسے جواب دہ اور اس کا حساب دینا پڑے گا۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری